اسلامک

گناہوں کا کفارہ

بسمہ تعالیٰ
گناہوں کا کفارہ
امید ہے آپ سب قارئین بحکم خدا تندرست
ہوں گے اور خصوصاہم جیسے حقیر بندوں کو اپنی دعاؤں میں یاد رکھتے ہونگے اگر نہیں رکھتے تو برائے کرم ضرور یاد رکھا کریں جیسا کہ آپ کو معلوم ہو گیا ہو گا
کہ ہماری آج کی گفتگو کیا ہے
جی قارئین حضرات ھماری گناہوں کی کثرت نیں ہمیں اللہ سے غافل کر دیا اور ہمیں اللہ نے ڈھیل دی اور ہم مزید سرکشی میں مبتلا ہو گئے اور اللہ جو کہ غفور اور
رحیم تھا ہم نیں اسکی طرف رجوع نہیں کیا البتہ وہ ہماری انتظار میں ہوتا ہے کہ کب میرے بھٹکے بندے میرے پاس لوٹ کے آئیں گے اور میں انکو معاف کروں گا یعنی اللہ بہانے اور طریقے ڈھونڈ رہا ہوتا ہے
ایک دفعہ ایک دشمن امام جعفر صادق کی خدمت میں آیا اور کہنے لگا کہ اگر آپ کا چاہنے والا کوئی گناہ کرے تو اسکی عاقبت کیا ہوگی تو امام نیں اسکے جواب میں فرمایا کہ خدا وند عالم اسکو ایک بیماری دے گا تاکہ بیماری کی تکلیف اسکے گناہوں کا کفارہ بنے گا اس شخص نیں دوبارہ پوچھا اگر بیمار نہ ہوا پھر
امام نے فرمایا
پروردگار عالم اسے برا پڑوسی دے گا تاکہ
اسکو تکلیف پہنچائے اور پڑوسی کا ازارو تکلیف اسکے گناہوں کا کفارہ بنے
تو اسنے پھر کہا کہ اگر برا پڑوسی بھی نہ ملے تو پھر
امام نے فرمایا کہ اسکو ایک برا دوست دے گا جو اسے تکلیف پہنچائے اور وہ تکلیف اسکے گناہوں کا کفارہ بنے
تو اسنے پھر کہا کہ اگر برا دوست بھی نہ ملے تو پھر
امام نے فرمایا بری بیوی جواسے تکلیف دے اور اسکے گناہوں کا کفارہ بنے
تو اسنے کہا کہ اگر بری بیوی نہ ملے تو پھر
امام نے فرمایا
کہ اللہ تعالیٰ موت سے پہلے اسکو توبہ کی تو فیق عطا کرے گا
تو اس آدمی نے بغض اور عناد کے با عث پھر کہااگر موت سے پہلے توبہ نہ کرسکا تو
تو امام عالی مقام نیں پھر فرمایا تیری آنکھوں میں خاک ہم اسکی شفا عت کریں
گے تو ائیں تھوڑی سی کوشش کرتے ہیں کہ
جو بندہ حقیر کی عقل سمجھ سکی کہ برے پڑوسی بھی اللہ تعالیٰ کی طرف سے
ایک نعمت ہیں اور اسی طرح برے دوست اور بری بیوی اور تکلیف اور پریشانی بھی
دعا ہے کہ اللہ تعالیٰ ہمیں اس قسم کی تمام نعمتوں کو سمجھنے کی توفیق عطا کرے
وسلام
آپ کا بھای نجیب اللہ نجیب

najeeb ullah najeeb

may name is najeeb ullah

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Back to top button
error: Content is protected !!