اسلامک

قیامت کے دن زیادہ سے زیادہ کن لوگوں کو عذاب ہوگا؟

قیامت کے دن زیادہ سے زیادہ کن لوگوں کو عذاب ہوگا؟
الجواب۔حضرت علی بن طالب رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ ایک دن میں اور سیدہ فاطمہ رضی اللہ عنہا حضور نبی کریمؐ کے پاس گئے تو سرکار مدینہؐ رورہے تھے تو ہم نے آپؐ سے رونے کا سبب پوچھا تو سرکار مدینہؐ نے جواب دیا کہ میں نے معراج کی رات عورتوں کو سخت عذاب میں مبتلا دیکھا۔پس اس وقت مجھے ان کے اس حالت رونے پر مجبور کردیا۔میں نے عرض کیا یا رسولؐ آپ نے وہاں کیا دیکھا تو آپؐ نے جواب دیا کہ میں نے ایک عورت کو اپنے بالوں کے ساتھ لٹکتے ہوئے دیکھا حالانکہ اس کے سر کا دماغ بھی کھول رہا تھا اور میں نے ایک عورت کو اپنی زبان کیساتھ لٹکا ہوا دیکھا حالانکہ اس کے دونوں ہاتھ اس کے پیٹھ کے ساتھ بند ھے ہوئے ہیں اور میں نے ایک عورت کو اس کے پستانوں کے ساتھ لٹکتے ہوئے دیکھا حالانکہ اس کے حلق میں زقوم پٹکایا جارہا تھا(یہ ایک جہنم کا درخت ہے)اس کے بعد میں نے ایک عورت کو لٹکا ہو ا دیکھا اور اس کے دونوں پاوں دونوں ہاتھوں کے ساتھ پیشانی کی طرف بندھے ہوئے تھے اور اس پر سانپ اور بچھو حملہ کررہے تھے ۔ اس کے علاوہ میں نے ایک عورت کو اپنا جسم کھاتے ہوئے دیکھا جبکہ آگ اس کے نیچے لگائی جارہی ہے اور ایک عورت کو میں نے دیکھا کہ اس کی جسم کوآگ کی قینچی کے ساتھ کاٹا جارہا ہے (علاوہ ازین ) میں نے ایک سیاہ چہرے والی عورت کو دیکھا اور وہ اپنی انتڑیاں کھا رہی تھی اور میں نے ایک ایسی عورت کو بھی دیکھا جو گونگی،بہری اور اندھی تھی اور وہ آگ کے صندوق میں پڑی تھی اور اس کے دماغ سے مغز نکل رہا تھا اور اس کی بدبو برص اور جذام سے بری ہے۔ اس کے بعد ایک ایسی عورت یہ میری نظر پڑی جس کا سر خنزیر کے سر کی طرح تھا اور اس کا جسم گدھے کے جسم کے مثل تھا اور وہ ہزاروں قسم کے عذاب میں مبتلا تھی ان کےعلاوہ وہ ایک عورت کتے کی مانند تھی بچھو اور سانپ اس کی فرج یعنی جسم کے اگلے حصے داخل ہورہے تھے اور پچھلےحصے سے نکل رہے تھے جبکہ فرشتے اس کے سر پر گرز ما رہے تھے تو سیدہ فاطمہ رضی اللہ عنھانےکھڑے ہوکر پوچھا یا رسولؐ ان عورتوں نے کیا کیا تھا؟
تو نبی کریمؐ نے فرمایا : کہ جو عورت بالوں کے ساتھ لٹکائی گئی تھی وہ عورت غیروں سے اپنے بال نہیں چھپاتی تھی اور جو عورت زبان سے لٹکا ئی گئی تھی وہ عورت اپنی زبان سے اپنے شوہر کو تکلیف دیتی تھی پھر سرکار مدینہؐ نے فرمایا کہ جو عورت اپنے خاوند کو زبان سے تکلیف دیتی ہےتو اللہ تعالیٰ نے اس کی زبان کو روز قیامت ستر(70)گز بنا دےگااور اس کے گردن کے پیچھے سے گرہ باندھے گااور جس عورت کو اپنے دونوں پستانوں سے لٹکایا گیا تھا وہ عورت دوسروں کے لڑکوں کو اپنے شوہر کی اجازت کے بغیر دودھ پلایا کرتی تھی اور جس عورت کو اس کے پاوں سے لٹکایا گیا تھا وہ عورت اپنے گھر سے شوہر کی اجازت کے بغیر نکلتی تھی اورحیض و نفاس کا غسل نہیں کرتی تھی اور جو عو رت اپنے جسم کو کھاتی تھی وہ اپنے جسم کو دوسروں مردوں کے لئے سجاتی تھی اور دوسروں کی غیبت کرتی تھی اور جس عورت کاجسم آگ کی قینچی سے کاٹا جارہا تھا وہ اپنی خوبصورتی اور بدن دوسروں کو دکھاتی تھی اور عورت جس کے پاوں ہاتھوں کے ساتھ پیشانی کی طرف بند ھے ہوئے ہیں اوراس پرسانپ بچھو مسلط تھے وہ طاقت کے باوجود نہ وضو نہ غسل اور نہ نماز ادا کرتھی تھی اور جس عورت کا سر سور کی طرح تھااور دھڑ گدھے کی مانند تھی وہ جھوٹ بولنے والی اور چغلی کرنے والی تھی اور جو کتے کی طرح تھی وہ اپنے شوہر سے بغض رکھتی تھی(درت نا صحین)۔

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Back to top button
error: Content is protected !!