تعلیم

کیا آپ بھی کھانا ایسے کھاتے ہیں ،شاید آپ نے وہ کہاوت نہیں سنی کہ آپ جس انداز سے کھانا کھاتے ہیں یہ آپ کی شخصیت کے رازوں سے پردہ ہٹاتا ہے

کیا آپ سے کبھی سوچا ہے کہ کھانا تو سب ہی منہ میں ڈالتے ہیں یہاں تک کے دو سال کے بچے کو بھی پتا ہوتا ہے کہ کھانا منہ سے کھاتے ہےلیکن بزرگوں کا کہنا ہے کھانا کھانے کا انداز درحقیقت انسان اور جانور میں فرق کو ظاہر کرتا ہے والدین اپنی اولاد کو ہمیشہ کھانا کھانے کے وہ آداب سکھاتے ہیں جو ہمارے دین نے ہمیں سکھائیں ہیں اور جو بات یا طریقہ ہمیں اسلام سکھائے اسے کون ٹال سکتا ہے۔مگر ہر بچہ اپنے انداز ہی سے کھانا کھاتا ہے- اس کی بھی ایک وجہ ہوتی ہے کھانے کا انداز درحقیقت انسان کی فطرت ، مزاج اور اس کی شخصیت کو ظاہر ہوتی ہے ایسا کہنا ہے بزگوں کا۔تو کیا آپ کو پتا ہے کہ کھانے کا کونسا انداز ہمیں اپنانا چاہئے۔آیئے بتاتے ہیں آپکو کھانے کو وہ انداز جس سے آپ کو کبھی شرمندگی کا سامنا نہیں کرنا پڑےگا۔اور لوگ آپ کی اس انداز سے متاثر ہونگے۔
آہستہ آہستہ کھانا ۔
وہ لوگ جو عماما آہستہ اہستہ کھانا کھاتے ہیں ان افراد کا شمار ایسے افراد میں ہوتا ہے جو کہ من موجی ہوتے ہیں اور زندگی کا ہر لمحہ انجوائے کرتے ہے۔ جب تک کسی ایک کام کو مکمل ختم نہ کر لیں تب تک دوسرے کام کے بارے میں نہیں سوچھتے ہیں- ایسے افراد اپنے ساتھیوں سے تنقید کا سامنا بھی کرنا پڑتا ہے۔کہ تم بہت سست ہو ۔ہر کام میں دیر کرتے ہو۔کھانے میں بھی کافی وقت ضائع کرتے ہو۔
جلدی جلدی کھانا۔
کچھ لوگ کھانا جلدی جلدی کھاتے ہے اور پسند بھی کرتے ہے۔ایسے لوگ ایک وقت پر اپنے آپکو کئ کاموں میں مصروف رکھتے ہیں اور ان میں کافی سارے کام ایک ہے وقت پر کرنے کی صلاحیت ہوتی بھی ہے۔ اور سارے کاموں کو وقت سے پہلے کرنے کی کوشش کرتا ہے۔اور کافی حد تک کامیاب بھی ہوتا ہے۔ اور اس کے باعث اپنے آرام کی بھی پرواہ نہیں کرتے ہیں۔
کھانے میں عیب نا نکالنے والے۔
وہ لوگ جو کھانے میں کبھی عیب نہیں نکالتے اور ہر چیز کو خوش فہمی کے ساتھ کھاتے ہیں۔تو آپ نے اپنے گھروں میں بھی دیکھا ہوگا کہ ایسے لوگوں گھر میں سب پسند کرتے ہے اور کسی کو اس سے شکایت نہیں ہوتی۔اور سب اسی عزت کرتے ہیں۔تو اگر کسی بندے کی گھر میں عزت ہو تو لازمی بات ہے کہ باہر بھی سب اسکی عزت ہی کرینگے۔اور کون نہیں چاہتا کہ لوگ اسکی عزت کرے۔اور جو لوگ کھانے میں اپنی پسند کی چیزیں کھاتے ہیں تو اسکی اس عادت سے زیادہ تر لوگ پیرشان ہوتے ہیں
تو کھانے میں کبھی عیب نہیں نکالنا چاہئے۔اور ہمیشہ اپنے طرف سے کھانا کھائے۔اور منہ سے چھبانے کی آواز نہ نکالیں۔اور کھانے میں گفتگو سے بھی پرہیز کریں۔اور جو ملے خوش فہمی کے ساتھ کھائے۔ا
یہں وہ طریقے ہے جواسلام بھی ہمیں سکھاتا ہے۔

Hashaam

سلام میں ہشام یہاں آپ کی خدمت میں حاضر ہوں۔میں یہاں روزانہ کی بنیاد پر اہم آرٹیکل لکھونگا۔جو کہ آپ کے انتہائی کام آیئنگے۔شکریہ

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Back to top button
error: Content is protected !!