ادب

چاندکی تمنائی

ہم سب کسی نہ کسی حد تک شاعری سے شغف رکھتے ہیں چاہئے تھوڑا ہی سہی۔میں آپ سے اپنی ہمشیرہ جنہوں نے اپنی نابینا ہونے کی محرومی کو شاعری کی زبان میں خوبصورتی سے پیش کیا ہے کے چنداشعار پیش کروں گی کسی سسکتی ہوئی سیاہ رات کی طرح یہ آنکھیں اب بھی کہتی ہیں، مجھے تم چاند لا دو نا میری آنکھوں کی بے نوری مجھے چلنے نہیں دیتی منہ کے بل گراتی ہے مجھے سنبھلنے نہیں دیتی میری تشنہ پیاسی آنکھوں کی ذراسی پیاس بجھادو نا مجھے تم چاند لادو نا.

سنا ہے پھول کھلتے ہیں چمن میں کلیاں ہنستی ہیں ان گل رنگ بہاروں سے میرا تعارف کرادو نا مجھےتم چاند لا دو نا سنا ہے نیلے امبر پر
ستارے جگمگاتے ہیں سیاہ اندھیری راتوں میں جگنوں ٹمٹماتے ہیں بھٹکے اداس بلبل کو رستہ وہ دکھاتے ہیں میری بے سمت راہوں کو
کوئی منزل دکھا دو نا مجھے تم چاند لا دو نا.

نیوز فلیکس 27 فروری 2021

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Check Also
Close
Back to top button
نوٹ: اگر آپ اپنی پروڈکٹس،سروسز یا آفرزکا مفت اشتہار لگوانا چاہتے ہیں تو نیوزفلیکس ٹیم، عوام تک آپ کا پیغام پہنچانےکا موقع فراہم کر رہی ہے. شکریہ_ اپنا پیغام یہاں لکھیں
error: Content is protected !!

Adblocker Detected

Note: Turn Off the AdBlocker For this Site