عوام کی آواز

پانی ہر قطرہ ہے زندگی

یہ دنیا ہمارے لیے ہی نہیں بلکہ ہماری آنے والی نسلوں کےلیے بھی ہے۔ اس لیے ہر انسان کے لیے ضروری ہےکہ دنیا کے ماحول کو نہ صرف اپنے لیے بلکہ آنے والی نسلوں کے لیے بھی بہتر سے بہترین بنانےمیں اپنا پورا کردار ادا کرے۔
زمین پر انسانی زندگی کے لیے ۳ چیزیں بہت ضروری ہیں جس میں ہوا، پانی اور خوراک شامل ہے۔صدیوں سے جاری انسانی لالچ اور قدرتی چیزوں کے استحصال کی وجہ سےآج دنیا کو پانی کی کمی، خوراک کی قلت اور فضائی آلودگی کا سامنا ہے۔ ایک اندازے کے مطابق دنیا میں ۶۶۳ ملین لوگوں کو اپنے گھروں کے قریب صاف پانی دستیاب نہی۔ اپنی ضروریات زندگی پورا کرنے کے لیے یہ لوگ دوردراز علاقوں سے پانی حاصل کرنے پر مجبور ہیں اور کچھہ آلودہ پانی کو صاف کر کے استعمال کرنے کی کوشش کرتے ہیں جس کے باعث ان کی زندگی اور صحت کے لیے خطرات بڑھ جاتے ہیں۔

پانی کی اہمیت کا احساس دلانے کے لیے ہرسال ۲۲ مارچ کو دنیا بھرمیں عالمی یوم پانی منایا جاتا ہے۔ دنیا میں پانی کی اہمیت پر توجہ دلانے کی غرض سے اقوام متحدہ نے ۱۹۹۲ میں اپنے ایک ماحولیات اور ترقی کے متعلق اجلاس میں پانی کا عالمی دن منانے کی منظوری دی۔ اسی سال دسمبر ۱۹۹۲ میں اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی نے ۲۲ مارچ کو عالمی یوم پانی کے طور پر منانے کی منظوری دی اور ۲۲ مارچ ۱۹۹۳ کو دنیا میں پہلا عالمی یوم پانی منایا گیا۔
یہ دن دنیا کے ہر معا شرے کو آگاہی دیتا ہے کہ وہ پانی کی اہمیت کو سمجھے اسے ضائع ہونے سے بچائے تاکہ یہ آئندہ نسلوں کو بچا سکے۔ جیسا کہ پوری دنیا یہ جانتی ہے زمین کا ۷۱ فیصد حصہ پانی سے ڈھکا ہواہے لیکن صرف ۳ فیصد پانی پینے اور ضروریات زندگی پوری کرنے کے لیے قابل استعمال ہے۔
پانی زندگی کا لازمی جزو ہے اس کے بغیر زندگی نا ممکن ہے، جسم کے سیلز کو زندہ رہنے کے لیے پانی کی ضرورت ہوتی ہے۔ انسانی جسم کا ۵۵ سے ۶۰ فیصد حصہ پانی پر مشتمل ہوتا ہے۔ پینے کا صاف پانی انسان کی بنیادی ضروریات میں شامل ہے۔انسان پانی کے بغیر تین سے چار دن تک زندہ رہ سکتا ہے۔ اقوامِ متحدہ کے ایک اندازے کے مطابق دنیا میں ہر روز سات سال سے کم عمر ۷۰۰ بچے آلودہ پانی پینے کی وجہ سے مر جاتے ہیں۔ پانی نا صرف انسانوں کےلیے بلکہ پودوں اور جانوروں کےلیے بھی بہت ضروری ہے۔ ایک دن میں ہر بالغ فرد کے لیے کم ازکم ۶ سے ۸ گلاس پانی پینا بہت ضروری ہے۔ پانی جسم میں آکسیجن کی گردش بہتر بنانے میں مدد کرتا ہے۔ پانی پینے کے علاوہ ہماری روز مرہ زندگی میں جیسے کھانا پکانا ، نہانا، صفائی ستھرائی اور دھلائی وغیرہ میں بھی استعمال ہوتا ہے۔
پانی صنعتوں میں ٹھنڈک اور صفائی کے علاوہ مختلف اشیا کی تیاری میں بھی استعمال ہوتاہے۔ کھیتی باڑی کا دارومدار بھی پانی پر ہی ہوتا ہے۔ جیسے جیسے انسانی آبادی میں اضافہ ہو رہا ہے پانی کا استعمال اور ضروریات بھی بڑھ رہی ہیں۔ ہمیں پانی کی بچت اور حفاظت پر خاص توجہ دینے کی ضرورت ہے۔
صاف پانی کی عدم دستیابی انسانی صحت کے لیے ایک بہت بڑا مسلہ ہے۔ اقوامِ متحدہ کی ایک رپورٹ میں اندازے کے مطابق دنیا کی دو تہائی آبادی کو پینے کے صاف پانی کی شدید قلت کا سامنا ہے اور یہ اندازہ بھی لگایا گیا ہے کہ۲۰۳۰ تک دنیا بھر میں ۷۰۰ ملین سے زائد افراد پانی کی قلت سے متاثر ہو سکتے ہیں۔ پانی کی بچت ہماری ذمیداری ہے۔ پانی کی بچت کے لیے اس کو آلودہ ہونے سے بچایا جائے اور اضافی پانی ضائع کرنے سے گریز کرنا چاہیے۔ پانی کو ری سائیکل کر کے دوبارہ مناسب استعمال کرنا چاہیے اس سے پانی کے ساتھ وسائل کی بھی بچت ہو گی۔ صنعتیں اور شہری آبادی پانی میں آلودگی کے اضافے کی وجہ بن رہی ہیں جس سے آبی حیات کی زندگی کو خطرات لاحق ہو سکتے ہیں۔ صنعتی آلودگی کے قوانین پر سختی سے عمل درآمد ہونا چاہیے اور شہروں کا پانی بغیر صاف کیے سمندر میں نہی گرانا چاہیے۔
پانی کو زندگی کے نام سے جانا جاتا ہے، لہذا زندگی کو بچانے کے لیے پانی کا تحفظ بہت ضروری ہے۔ یہ سچ کہاوت ہے کہ پیاسے آدمی کے لیے سونے کی بوری سے زیادہ پانی کا ایک قطرہ قابل قدر ہے۔ پانی کا ہر قطرہ اہمیت رکھتا ہے اس لیے ایک قطرہ بھی ضائع نہی ہونا چاہیے۔ پانی کی بچت کرنا اور اس کی کھپت کو کم کرنا ہر انسان کی ذمیداری ہے۔
پانی اللہ کی عطا کردہ ایک عظیم نعمت ہے اس لیے ہمیں احتیاط سے استعمال کرنا چاہیے۔ پانی کا ہر قطرہ زندگی ہے لہذا پانی بچائیں، جان بچائیں۔

KASHIF ALI

“Don’t search for what you’re passionate about, serve others to make yourself passionate.”

3 Comments

  1. پانی اللہ کی عظیم نعمت ہے اس نعمت کی جتنی قدر اور شکر کیا جائے کم ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button
نوٹ: اگر آپ اپنی پروڈکٹس،سروسز یا آفرزکا مفت اشتہار لگوانا چاہتے ہیں تو نیوزفلیکس ٹیم، عوام تک آپ کا پیغام پہنچانےکا موقع فراہم کر رہی ہے. شکریہ_ اپنا پیغام یہاں لکھیں
error: Content is protected !!

Adblocker Detected

Note: Turn Off the AdBlocker For this Site