Health & Medicalصحت

Melons are good for six diseases. Benefits of Melons.

خربوزہ چھ بیماریوں کے لیے مفیدھےخربوزہ کے فوائد ایسے فوائد جن سے آپ لاعلم تھے

Melon is useful for six diseases, some of the benefits of melon that you were unaware of. Allah Almighty, with His perfect power, has hidden innumerable benefits in fruits, vegetables, and herbs. That is, nature did not create anything in vain. Today we are going to tell you the benefits of what is called the melon. Melons contain glucose, potassium, copper, vitamins A, and B. Eating them makes you urinate. And the body excretes waste products. Useful in diseases like jaundice, stones, constipation, urination. Melon peel and seeds are all useful.

If the melon is fed to children in hot weather, their boils will also get relief. It also breaks down kidney stones. However, do not eat melon on an empty stomach. Melons should be eaten in-store seeds. Be careful after eating it. Water should not be drunk at all, especially after eating melons. It does not have good effects on the body. There is a risk of cholera. Because melons already have water in them. So there is no need to drink water.

Protects the body from dryness in heat. And the vitamin D in it is good for health. Strengthens the muscles and veins of the body. Protects from heat. Eating it makes the heart happy. You should be careful not to force melon when your stomach is full. Therefore, it is better not to take it at night even after eating. When the watermelon comes in the summer, eat it as needed. So that the body gets full energy. Use melon for kidney stones under the supervision of a qualified doctor and eat in the prescribed amount. Melon peels are also useful.

Melons are rich in nutrients. Using melon in physical weakness increases weight. Physical fitness is lost. You feel refreshed. Let me tell you about some of the major benefits of melons. Benefits that most people are unfamiliar with.

No. 1: Heartburn: This fruit containing 90% water is also an elixir in heartburn. Eating it relieves heartburn. Gastric acidity: Melon contains a lot of water, which is very beneficial for the digestive system. The minerals in it can be helpful in eliminating gastric acidity.

No. 2: Heart Attack: A special ingredient in melon does not allow blood cells to clot and if it does not, it increases the chances of later heart attack. Melon regulates blood circulation in the body. This greatly reduces the chances of a heart attack.

No. 3: For the treatment of cancer: The protein called carotene in melon is a natural anti-cancer drug and greatly reduces the risk of lung cancer. Melons kill these cancer seeds. Which can then strongly attack the human body. Therefore, it is possible to prevent cancer.

No. 4: For skin health: Melon is an excellent food for maintaining and improving skin health. The protein in melon not only makes the skin beautiful and soft. On the contrary, protection from skin diseases is quite possible.

No. 5: Useful in kidney diseases: The use of melon cleanses the kidneys and also removes the accumulated densities in the kidneys. If the melon is eaten mixed with lemons, it also relieves pain like uric acid.

خربوزہ چھ بیماریوں کے لیے مفیدھےخربوزہ کے فوائد ایسے فوائد جن سے آپ لاعلم تھے

خربوزہ چھ بیماریوں کے لیے مفید ہے ، خربوزے کے کچھ ایسےفوائدجس سے آپ لاعلم تھے۔ اللہ تعالیٰ نے اپنی قدرت کاملہ سے پھلوں، سبزیوں اور جڑی بوٹیوں میں بے شمار فوائد پنہاں رکھے ہیں۔ یعنی قدرت نے کوئی بھی چیز بے مقصد پید ا نہیں کی۔ آج ہم آپ کو جس چیز کے فوائد بتانے جارہے ہیں اس کا نا م ہے خربوزہ ۔ خربوزے میں گلوکوز، پوٹاشیم، تانبا ، وٹامن اے ،اور بی شامل ہیں۔ اس کے کھانے سےپیشاب کھل کرآتا ہے۔ اور جسم سے فاسد مادے خارج ہوجاتے ہیں۔ یرقان، پتھری ، بندش ، پیشاب جیسے امراض میں مفید ہے۔ خربوزے کا چھلکا ،اور بیج سب کارآمد ہیں۔

خربوزہ گرمی میں بچوں کو کھلایا جائے تو ان کے پھوڑے پھنسیوں کو بھی آرام ملتا ہے۔ گردے کی پتھری کو بھی توڑتا ہے۔ البتہ خالی پیٹ خربوزہ نہ کھائیں ۔ دوکھانوں کے بیج میں خربوزہ کھانا چاہیے۔ اس کوکھانے کے بعداحتیاط کریں۔ خصو صاً خربوزے کھانے کے بعد پانی بالکل نہیں پینا چاہیے ۔ اس سے جسم پر اچھے اثرات نہیں ہوتے ۔ بلکہ ہیضہ ہونے کا اندیشہ ہوتا ہے۔ کیونکہ خربوزے میں پہلے ہی پانی موجود ہوتا ہے۔ اس لیے پانی پینے کی ضرورت نہیں ہوتی۔

گرمی میں جسم کو خشکی سے محفو ظ رکھتا ہے۔ اور اس میں موجود وٹامن ڈی صحت کے لیے مفید ہے۔ جسم کے پٹھوں اوررگوں کوتوانائی دیتا ہے۔ گرمی کی شدت سے بچاتا ہے۔ اس کے کھانے سے دل کو فرحت ہوتی ہے۔ آپ کو اتنی احتیا ط کرنی چاہیے کہ جب پیٹ بھرا ہوتب زبردستی خربوزہ نہ کھائیں ۔ اس لیے رات کو بھی کھانے کے بعد نہ لیں تو بہتر ہے۔ جب گر می میں خربوزہ آئے تو اسے ضرورت کھائیں۔ تاکہ جسم کو بھر پور توانائی ملے ۔ گردے کی پتھری کے لیے خربوزہ کا استعمال کسی لائق طبیب کی نگرانی میں اور اس کی بتائی گئی مقدار میں کھائیں۔ خربوزے کے چھلکے بھی کام آتے ہیں۔

خربوزے میں کافی غذائی اجزاء پائے جاتے ہیں۔ جسمانی کمزوری میں خربوزہ استعمال کرنے سے وزن بڑھتا ہے۔ جسمانی نقاہت ختم ہوتی ہے۔ آپ خود کو تازہ دم محسوس کرتے ہیں۔ اب آپ کو خربوزے کے چند ایسے بڑے اور اہم فوائد کے بارے میں بتاتے ہیں۔ ایسے فوائد جن سے اکثرافراد نا آشنا ہیں۔

نمبر1:سینے کی جلن: نوے فیصد پانی پر مشتمل یہ پھل سینے کی جلن میں بھ اکسیر کی حیثیت رکھتا ہے۔ اس کے کھانے سے سینے کی جلن ختم ہوجاتی ہے۔ معدے کی تیزابیت: خربوزہ میں پانی کی مقدار بہت زیادہ ہوتی ہے۔جو نظام انہضام کے لیے نہایت نفع بخشش ہے ۔ اس میں شامل منرلز معدے کی تیزابیت کے خاتمہ میں معاون ثابت ہوسکتے ہیں۔

نمبر2:ہارٹ اٹیک: خربوزے میں شامل ایک خاص جزو(اڈینو سائن)خ ون کے خلیوں کوجمنے نہیں دیتا اور اگر ایسا نہ ہوتو یہ چیز بعدازں ہارٹ اٹیک کے امکانات بڑھادیتی ہے۔ خربوزہ جسم میں خون کی گردش کو معمول پر رکھتا ہے۔ جس سے ہارٹ اٹیک امکانا ت نہایت کم ہوجاتے ہیں۔

نمبر3:کینسر کا علاج کے لیے: خربوزے میں شامل کروٹینا ئڈ نامی پروٹین کینسر سے بچاؤ کی قدرتی دوائی ہے۔اور پھیپھڑوں کے کینسر کے خطرات کو بہت حد تک کم کردیتا ہے۔ خربوزہ کینسر کے ان بیجوں کو ہی مار دیتا ہے۔ جو بعد ازاں انسانی جسم پر مضبوطی سے حملہ آور ہوسکتے ہیں۔ اس لیے کینسر سے بچاؤ ممکن ہے۔

Also Read:

یورک ایسڈ کا جڑ سے خاتمہ ایک گھریلو ٹوٹکے کے ساتھ

نمبر4:جلد کی صحت کے لیے : جلد کی صحت کو برقرار رکھنے اور بہتری کے لیے خربوزہ نہایت عمدہ غذآ ہے۔ خربوزہ میں شا مل پروٹین جلد کو نہ صرف خوبصورت و ملائم بناتے ہیں ۔ بلکہ جلدی بیماریوں سے حفاظت کافی حد تک ممکن ہوجاتی ہے۔

نمبر5:گردے کے امراض میں مفید: خربوزے کا استعمال گردوں کو صاف کرتا ہے اور گردے میں جمی ہوئی کثافتوں کو بھی دور کردیتا ہے۔ اگر خربوزہ کو لیموں کے ساتھ ملا کر کھایاجائے تویہ یورک ایسڈ جیسی تکلیف میں بھی آرام پہنچاتا ہے۔

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button
info@newzflex.com-اگر آپ اپنے پسندیدہ موضوع کو ویڈیو کی صورت میں دیکھنا چاہتے ہیں تو ہمیں اپنی پسند سے آگاہ کرنے کیلیے اس ایڈریس پر ای میل کیجیےLike & Subscribe the Newz_Flex Channel
error: Content is protected !!