اسلامک

Dangerous dream forty days before his death, what did Hazrat Ali (RA) say?

مرنے سے چالیس دن پہلے خطرناک خواب، حضرت علی رضی اللہ عنہ نے کیا فرمایا؟

حضرت علی رضی اللہ عنہ کی خدمت میں ایک شخص آیا اور انتہائی ادب سے عرض کرنے لگا- یا علی رضی اللہ عنہ ! میرا ایک دوست تھا جس کا آج انتقال ہوگیا ہے۔ لیکن وہ کافی عرصے سے ایسی باتیں کررہاتھا جس سے ہمیں یہ معلوم ہوتا تھا کہ شاید اس کی موت ہوجائے گی

کیا موت سے پہلے انسان کو پتہ چلتا ہے؟ کہ وہ مرنے والا ہے یا نہیں ؟ تو اس پر حضرت علی رضی اللہ عنہ نے فرمایا: اے شخص ! یاد رکھنا اللہ نے عالم ملکوت، عالم بیاہ اور عالم عروہ کے بیچ ہرانسان کے لیے مایاکل روا رکھا ہے ۔ جو اسے آنے والی مصیبتیں ، پریشانیاں اور وقت کے بارے میں آگاہ کر دیتا ہے۔

اللہ اپنے بندوں سے پیار کرتا ہے۔ انسان موت کو ختم ہونے کا نام سمجھتے ہیں۔ اصل میں موت ایک زندگی کی طرف انسان کو لے جانے کا نام ہے۔ موت ختم ہونے کا نام نہیں ۔ کبھی اللہ اپنے بندوں سے موت کا ڈر ختم کرنے کے لیے الہامی خواب دکھاتا ہے۔ تا کہ مرنے والے انسان موت کو نئی زندگی سمجھے ۔ اور مرنے سے پہلے اپنی اصلاح میں لگ جائے۔ اپنے آپ کو بہتر بنانے کی کوشش کرے۔ اپنے گنا ہوں کی معافی مانگ لے۔ جس طرح وہ کبھی کسی سفر کو جاتا ہے۔ تو اس کی تیاری کرتا ہے۔ اس کا سامان جمع کرتا ہے۔ ویسے ہی برزخ کا سامان جمع کرلے ۔

وہ انسان کہنے لگا یا علی رضی اللہ عنہ ! اس خوا ب میں کیا مناظر نظر آتے ہیں۔ تو حضرت علی رضی اللہ عنہ نے فرمایا: اس منظر میں یہ نظر آتا ہے۔ کہ انسان سفر کر رہا ہے۔ اس کا لباس سفید ہوتا ہے۔ اور اس سفر میں وہ انسان جو اس کے ساتھ رہتے تھے لیکن آج مرچکے ہیں۔ وہ اسے نظر آتے ہیں۔ اور یہ کہتے ہیں کہ تمہارا سفر ختم ہونے والا ہے۔ جبکہ انسان ان لوگوں کو دیکھتا ہے۔ جو ان کے ساتھ پہلے رہتے تھے وہ مرنے کے بعد بھی ختم نہیں ہوئے ۔

تو انسان مطمئن ہونے لگتا ہے۔ تو اسے موت سے ڈر نہیں لگتا ۔ تو وہ کہنے لگا یاعلی ! اگر کوئی ایسا خوا ب دیکھے تو اسے معلو م کیسے ہو گا؟ کہ یہ الہامی خواب تھا یا شیطانی ؟ تو حضرت علی رضی اللہ عنہ نے فرمایا: جب بھی اس قسم خواب دیکھو ، خواب دیکھنے کے بعد تم ڈرنے لگو، پریشان ہونے لگو، تو سمجھ جانا کہ وہ خواب شیطانی ہے لیکن اس خواب کے بعد تم مطمئن ہونے لگو اور تمہیں موت سے پیار ہونے لگے ۔ تو سمجھ جانا یہ خواب رحمانی ہے۔

Dangerous dream forty days before his death, what did Hazrat Ali (RA) say?

A man came to the service of Hazrat Ali (RA) and began to ask with great politeness – O Ali (RA)! I had a friend who passed away today. But he had been talking for a long time that we knew he might die

Does man know before he dies? Is he going to die or not? Upon this, Hazrat Ali (RA) said: O man! Remember that Allah has ordained for every human being between the realm of heaven, the world of marriage, and the world of Arwa. Which informs him of the troubles, worries, and time to come.

God loves His servants. Humans consider death to be the name of the end. In fact, death is the name of leading a person to live. Not the name of the end of death. Sometimes Allah has divine dreams to remove the fear of death from His servants. So that the dying person may consider death as new life. And before he dies, he should start correcting himself. Try to improve yourself. Apologize for your sins. The way he ever goes on a trip. So he prepares it. Collects his goods. In the same way, collect the goods of Barzakh.

The man began to say, ‘O Ali!’ What scenes do you see in this dream? So Hazrat Ali (RA) said: This is seen in this scene. That man is traveling. Her dress is white. And the people who lived with him on this journey but are dead today. They see it. And they say that your journey is coming to an end. While the man sees these people. Those who lived with him before did not die.

So man begins to be satisfied. So he is not afraid of death. So he began to say Yaali! If someone has such a dream, how will he know? Was it an inspired dream or a satanic one? So Hazrat Ali (RA) said: Whenever you dream like this, after dreaming you start getting scared, start getting upset, then understand that that dream is evil but after this dream, you start getting satisfied and you love death. Began to happen. So to understand this dream is merciful.

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button
error: Content is protected !!