Featured

‘Letters of Administration and Succession Certificates’ Initiative Introduced in Pakistan

پاکستان میں ’’ لیٹر آف ایڈمنسٹریشن اور جانشینی سرٹیفکیٹ ‘‘ متعارف کرایا گیا۔

In a high-profile event on Wednesday, July 14, 2021, Prime Minister Imran Khan launched the Letter of Administration & Succession certificate Initiative for Punjab. Addressing the event, the Prime Minister called it a significant step that aims to smooth the general public including the overseas Pakistanis.

He further stated that the government was committed to generalize the use of the concluding technologies to introduce and promote the generality of E-governance in the country. According to the premier, all these actions were intended to further ease and simplify the life of a common citizen. He also said that all regional land records in major megacities across the country would be digitized by August. The Letter of Administration and Succession Certificate go has before been launched in Islamabad. According to the Federal Minister of Law and Justice Farogh Naseem, the digitized legacy system has been introduced in the form of a state-of-the-art online platform and is working successfully in the public capital.

In this period of digitization, the conception of E-governance is being significantly promoted among different walks of life to smooth the citizens of Pakistan. Not long ago, the Digital Pakistan Campaign was launched nationwide, which turned out to be a revolutionary go to digitally empower the country. And, let’s not forget the SBP’s National Payment System Strategy that aims to perfect the digital scrimping in Pakistan. The recent digitization of the heritage system in the country is also being considered a major enhancement to promote the status of e-governance in Pakistan. Prime Minister Imran Khan has launched the ‘Letters of Administration and Succession Documents’ enterprise in the form of a slice- edge online system, which aims to loosen both imported citizens and overseas Pakistanis.

Want to learn further about this digital changeover of the heritage system and how to apply for a parentage document through NADRA? We’ve got you covered. In this blog, we’re going to give you all the pivotal details about this tech-driven enterprise and take you through the entire play submission process for the succession certification, which is also known as the letter of administration.

So, without additional ado, let’s begin!

The Launch of Succession Certification Initiative Digitization of Inheritance System in Pakistan
As agitated, to digitize the amplitude of the inheritance system in the country, Prime Minister Imran Khan has introduced a state-of-the- art online system. It’ll be used by the legal inheritors of a breathless family member to freely acquire the succession certification. After the achievement of this groundbreaking action, the allocation time of succession certifications will be dramatically reduced to only 15 days.

Prime Minister Imran Khan said that anteriorly objects suffered overweening holdups in making succession certificates as there was no proper system in place and the entire process took two to seven spans to complete.

Establishment of ‘Succession Facilitation Units’in Collaboration with NADRA

The Prime Minister of Pakistan has entrusted Barrister Farogh Nasim, who’s also the Minister for Law, and Justice, to work on the performance of the “succession Certificate” enterprise. Barrister Farogh Nasim is uniting with the National Database Regulatory Authority (NADRA) to work on the layout of‘Succession Facilitation Units’across the country.

According to Barrister Farogh Nasim, NADRA’s data-backed assist will be extremely fruitful for the proper commission of the ‘Letters of Administration and Succession Certifications’ aggressiveness. He further said that once the process comes into effect, the legal inheritors of a property will be competent to bag succession certifications within a matter of 15 days after submitting the exercise, which anteriorly appeared insoluble.

Note: As per the Pakistan inheritance laws, which are driven by the Islamic inheritance laws, the legal inheritors of the deceased include their parents, children, spouse, and siblings.

Now, let’s take a closer look at the application submission process of this new- introduced an online system for succession certificates.

Succession Certificates Application Submission Process in a Step-by-step Manner

According to NADRA’s officer portal, presently are the five main tracks involved in the use process of a succession certificate or letter of administration.

1). Application Initiation: It’s the really first step of the process in which legal heirs supply their and deceased’s identity details as well as the death instrument.

2). Submission of Legal Legatees and Wealth Details: This step is self-illuminative. It involves pertinent details regarding the capital of the gone (both movable and nonmoving).

3). Verification of the Mentioned Legal Heirs and Handed Details: All legal heirs mentioned in the application takes to visit NADRA’s Registration Center for Biometric Verification for the verification process.

4). Publication of announcement in Newspaper: NADRA will either publish a notice to the public in the form of an announcement in the magazine to make sure there aren’t any exceptions to the particular applications.

5). Printing and allocation of the Succession Certificate (The Final Step): When no exception on the application is raised after the 14 days of the newspaper announcement, the succession certificate or letter of administration will be printed and issued.

Note: For added information regarding the application process and charge for the succession certification/ letter of administration, navigate to the authorized website of NADRA.

انتظامیہ اور جانشینی سرٹیفکیٹس کا اقدام پاکستان میں متعارف کرایا گیا۔

بدھ ، 14 جولائی 2021 کو ایک ہائی پروفائل تقریب میں ، وزیر اعظم عمران خان نے لیٹر آف ایڈمنسٹریشن اور جانشینی سرٹیفکیٹس انیشی ایٹو برائے پنجاب کا آغاز کیا۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نے اسے ایک اہم قدم قرار دیا جس کا مقصد بیرون ملک مقیم پاکستانیوں سمیت عام لوگوں کو سہولت فراہم کرنا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ حکومت ملک میں ای گورننس کے تصور کو متعارف کرانے اور اسے فروغ دینے کے لیے جدید ٹیکنالوجی کے استعمال کو عام کرنے کے لیے پرعزم ہے۔ وزیر اعظم کے مطابق ، ان تمام اقدامات کا مقصد ایک عام شہری کی زندگی کو مزید آسان اور آسان بنانا تھا۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ ملک بھر کے بڑے شہروں میں تمام شہری اراضی کے ریکارڈ اگست تک ڈیجیٹل ہو جائیں گے۔لیٹر آف ایڈمنسٹریشن اور جانشینی سرٹیفکیٹ کا اقدام پہلے ہی اسلام آباد میں شروع کیا جا چکا ہے۔ وفاقی وزیر قانون و انصاف فروغ نسیم کے مطابق ، ڈیجیٹلائزڈ وراثت کا نظام ایک جدید ترین آن لائن پلیٹ فارم کی شکل میں متعارف کرایا گیا ہے اور وفاقی دارالحکومت میں کامیابی سے کام کر رہا ہے۔

ڈیجیٹلائزیشن کے اس دور میں ، ای گورننس کے تصور کو پاکستان کے شہریوں کی سہولت کے لیے مختلف شعبہ ہائے زندگی میں نمایاں طور پر فروغ دیا جا رہا ہے۔ کچھ عرصہ قبل ڈیجیٹل پاکستان مہم ملک بھر میں شروع کی گئی تھی جو کہ ملک کو ڈیجیٹل طور پر بااختیار بنانے کے لیے ایک انقلابی اقدام ثابت ہوئی۔ اور ، آئیے ایس بی پی کی قومی ادائیگی کے نظام کی حکمت عملی کو نہ بھولیں جس کا مقصد پاکستان میں ڈیجیٹل معیشت کو بہتر بنانا ہے۔ملک میں وراثت کے نظام کی حالیہ ڈیجیٹلائزیشن بھی پاکستان میں ای گورننس کی حیثیت کو فروغ دینے کے لیے ایک اہم پیش رفت تصور کی جا رہی ہے۔ وزیر اعظم عمران خان نے جدید ترین آن لائن سسٹم کی شکل میں ’لیٹرز آف ایڈمنسٹریشن اینڈ جانشینی سرٹیفکیٹس‘ کا آغاز کیا ہے ، جس کا مقصد مقامی شہریوں اور بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو سہولت فراہم کرنا ہے۔

وراثت کے نظام کی اس ڈیجیٹل تبدیلی اور نادرا کے ذریعے جانشینی سرٹیفکیٹ کے لیے درخواست دینے کے بارے میں مزید جاننا چاہتے ہیں؟ ہم نے آپ کا احاطہ کیا ہے۔ اس بلاگ میں ، ہم آپ کو اس ٹیک سے چلنے والے اقدام کے بارے میں تمام اہم تفصیلات دینے جا رہے ہیں اور جانشینی سرٹیفیکیشن کے لیے درخواست جمع کرانے کے پورے عمل میں آپ کو لے جائیں گے ، جسے لیٹر آف ایڈمنسٹریشن بھی کہا جاتا ہے۔

تو ، مزید اڈو کے بغیر ، آئیے شروع کریں

جانشینی سرٹیفیکیشن اقدام کا آغاز: پاکستان میں وراثت کے نظام کی ڈیجیٹلائزیشن
جیسا کہ زیر بحث ہے ، ملک میں وراثت کے نظام کے دائرہ کار کو ڈیجیٹلائز کرنے کے لیے ، وزیر اعظم عمران خان نے ایک جدید ترین آن لائن نظام متعارف کرایا ہے۔ اس کا استعمال کسی متوفی خاندان کے رکن کے ورثاء آسانی سے جانشینی کا سرٹیفکیٹ حاصل کرنے کے لیے کریں گے۔ اس اہم اقدام کے نفاذ کے بعد ، جانشینی سرٹیفکیٹ کے اجراء کا وقت ڈرامائی طور پر کم ہو کر صرف 15 دن ہو جائے گا۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ اس سے قبل افراد کو جانشینی سرٹیفکیٹ کے حصول میں بہت زیادہ تاخیر کا سامنا کرنا پڑا کیونکہ وہاں کوئی مناسب نظام موجود نہیں تھا اور اس پورے عمل کو مکمل ہونے میں دو سے سات سال لگے۔نادرا کے ساتھ تعاون میں ’’ جانشینی سہولت یونٹس ‘‘ کا قیام۔وزیراعظم پاکستان نے بیرسٹر فروغ نسیم کو جو کہ قانون اور انصاف کے وزیر بھی ہیں ، ’’ جانشینی سرٹیفکیٹ ‘‘ اقدام پر عملدرآمد کے لیے کام کرنے کی ذمہ داری سونپی ہے۔ بیرسٹر فروغ نسیم نیشنل ڈیٹا بیس ریگولیٹری اتھارٹی (نادرا) کے ساتھ مل کر ملک بھر میں ‘ساکشن فیسیلیٹیشن یونٹس’ کی تشکیل پر کام کر رہے ہیں۔

بیرسٹر فروغ نسیم کے مطابق ، ’’ لیٹرز آف ایڈمنسٹریشن اور جانشینی سرٹیفکیٹس ‘‘ اقدام کے مناسب نفاذ کے لیے نادرا کی ڈیٹا بیکڈ مدد انتہائی نتیجہ خیز ثابت ہوگی۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایک بار جب یہ عمل لاگو ہو جائے گا ، جائیداد کے قانونی وارث درخواست جمع کرانے کے بعد 15 دن کے اندر جانشینی سرٹیفکیٹ حاصل کر سکیں گے ، جو کہ پہلے ناممکن لگتا تھا۔فوری حقائق: پاکستان وراثت کے قوانین کے مطابق ، جو اسلامی وراثت کے قوانین کے تحت چلتے ہیں ، میت کے قانونی ورثاء میں ان کے والدین ، ​​بچے ، شریک حیات اور بہن بھائی شامل ہیں۔اب ، آئیے جانشینی کے سرٹیفکیٹس کے لیے اس نئے متعارف کرائے گئے آن لائن سسٹم کی درخواست جمع کرانے کے عمل کو قریب سے دیکھیں۔

مرحلہ وار طریقے سے جانشینی سرٹیفکیٹ درخواست جمع کرانے کا عمل۔

نادرا کے آفیشل پورٹل کے مطابق ، جانشینی کے سرٹیفکیٹ یا لیٹر آف ایڈمنسٹریشن کی درخواست کے عمل میں شامل پانچ اہم مراحل یہ ہیں۔

نمبر1:درخواست کا آغاز: یہ اس عمل کا پہلا قدم ہے جس میں قانونی وارث اپنی اور میت کی شناخت کی تفصیلات کے ساتھ ساتھ موت کا سرٹیفکیٹ بھی فراہم کرتے ہیں۔

نمبر2:قانونی وارثوں اور اثاثوں کی تفصیلات جمع کرانا: یہ مرحلہ کافی وضاحت طلب ہے۔ اس میں میت کے اثاثوں کے بارے میں متعلقہ تفصیلات شامل ہیں (منقولہ اور غیر منقولہ دونوں)۔

نمبر3:تذکرہ شدہ قانونی وارثوں کی تصدیق اور فراہم کردہ تفصیلات: درخواست میں بیان کردہ تمام قانونی وارثوں کو تصدیق کے عمل کے لیے بائیومیٹرک تصدیق کے لیے نادرا کے رجسٹریشن سینٹر کا دورہ کرنا ہوگا۔

نمبر4:اخبار میں اشتہار کی اشاعت: نادرا اس کے بعد اخبار میں اشتہار کی صورت میں عوام کو نوٹس شائع کرے گا تاکہ یہ یقینی بنایا جا سکے کہ مخصوص درخواستوں پر کوئی اعتراض نہیں ہے۔

نمبر5:جانشینی سرٹیفکیٹ کی پرنٹنگ اور اجراء (آخری مرحلہ): جب اخبار کے اشتہار کے 14 دن بعد درخواست پر کوئی اعتراض نہیں اٹھایا جائے گا تو جانشینی کا سرٹیفکیٹ یا لیٹر آف ایڈمنسٹریشن چھاپا جائے گا اور جاری کیا جائے گا۔

نوٹ: جانشینی سرٹیفکیٹ/لیٹر آف ایڈمنسٹریشن کے لیے درخواست کے عمل اور فیس سے متعلق مزید معلومات کے لیے ، نادرا کی آفیشل ویب سائٹ پر جائیں۔

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button
error: Content is protected !!