HEALTH & MEDICAL

کر ونا وائرس کب ختم ہوگا؟

کورونا وائرس کب ختم ہوگا؟

کرونا کب ختم ہوگا؟ ان چند مہینوں میں گلوبل لیول پر 4 کروڑ سے زیادہ کیسز اور 10 لاکھ سے زیادہ اموات ہو چکی ہیں۔ آپ اس بڑھتی ہوئی تعداد سے یہ سوچ کر پرشان ہونگے کہ یہ کرونا وائرس آخر کب ختم ہوگا؟

پاکستان میں کورونا کا پہلا  کیس کراچی میں  26 فروری 2020 کو پیش آیا اور اگلے ہی مہینے یعنی 18 مارچ 2020 کو پاکستان میں کورونا کی وجہ سے  پہلی موت پیش آیی۔
اب بات آتی ہے کہ کورونا  آخر ختم کب ہوگا؟  دراصل اس  کا جواب دینا ذرا مشکل ہے۔
وبائی مرض کے آغاز میں،وبائی امراض کے ماہر اور صحت عامہ کے ماہر کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لئے اور  مستقبل کی پیش گوئی کے لئے ریاضی کے ماڈلز کا استعمال کر رہے ہیں۔

لیکن متعدی بیماری کا ماڈلنگ مشکل ہے اور یہاں تک کہ جدید ترین ورژن ، جیسے پیشن گوئی کو یکجا کرتے ہیں یا مشین لرننگ کا استعمال کرتے ہیں ، لازمی طور پر یہ ظاہر نہیں کرسکتے کہ وبائی بیماری کب ختم ہوگی یا کتنے افراد کی موت ہوگی۔
اس مرض کے شروع میں لوگوں نے امید کی کہ یہ خود بخود گرمی کی وجہ سے ختم ہو جائے گا اور  دوسروں نے دعوی کیا کہ ایک بار کافی افراد میں انفکشن ہونے کے بعد ریوڑ کی قوت مدافعت شروع ہوجاتی ہے۔  لیکن ایسا کچھ نہیں ہوا۔
ماہرین کا کہنا ہے کہ  ہو سکتا ہے ویکسین کے بن جانے کے بعد بھی کورونا وائرس کبھی ختم نہ ہو ۔ یہ ممکنہ طور پر دوسری جگہوں پر بھی جاری رہے گا ، اور کہیں اور بھی انفیکشن کا باعث بنے گا۔
تاریخی اور عصری مثالوں کے پیش نظر ، انسانیت صرف یہی امید کر سکتی ہے کہ COVID-19 کا سبب بننے والا کورونا وائرس ایک قابل علاج ثابت ہوگا۔

Related Articles

One Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Back to top button