BUSINESS

Freelancing in Pakistan

پاکستان میں فری لانسنگ

گلوبل بزنس پروسیس آؤٹ سورسنگ (بی پی او) انڈسٹری 2002 سے مسلسل ترقی کر رہی ہے، اور اس ترقی نے فری لانسنگ یا آن لائن گیگ مارکیٹ کو جنم دیا۔ فری لانسرز یا فری لانسنگ سیکٹر کی جانب سے نمایاں شراکت کی بدولت 2027 تک بی پی او انڈسٹری $405.6 بلین تک پہنچنے کی توقع ہے۔ ہندوستان، چین، فلپائن، اور پاکستان، جن میں چند ایک کے نام شامل ہیں، ان ممالک میں شامل ہیں جو نمایاں طور پر کم قیمت پر افرادی قوت اور مہارت کی وسیع دستیابی کی وجہ سے زیادہ تر آؤٹ سورس کام حاصل کرتے ہیں۔ جہاں تک پاکستان کا تعلق ہے، پاکستان میں فری لانسنگ نے ناقابل یقین رفتار سے ترقی کی ہے۔

آؤٹ باؤنڈ اور ان باؤنڈ کال سینٹرز کی افزائش سے لے کر سوفٹ ویئر ہاؤسز، ٹیک کمپنیوں، اور مواد ملز کی ترقی تک، پاکستان میں فری لانسرز نے اس انتہائی مسابقتی صنعت میں اپنی پوزیشن کو مستحکم کیا ہے۔پاکستان میں حالیہ دنوں میں پاکستان کی جیگ اکانومی یا فری لانسنگ انڈسٹری کی کامیابی کا انکشاف مالی سال 2018-19 کی ایک متواتر رپورٹ میں کیا گیا جو کہ اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے جاری کی ہے۔ پاکستان فری لانسنگ کی دنیا کے پانچ مقبول ترین ممالک میں سے ایک کے طور پر فخر سے کھڑا ہے۔ جدید ٹیکنالوجی اور تیز رفتار انٹرنیٹ کنیکشن کی دستیابی کی بدولت، پاکستان کے مختلف حصوں سے تعلق رکھنے والے لوگ – یہاں تک کہ دور دراز کے علاقوں سے بھی – دور سے کام کرنے اور پاکستان کی معیشت میں اپنا حصہ ڈالنے کے قابل ہوئے ہیں۔

پاکستان باصلاحیت لوگوں کا مرکز ہے۔

PAKISTAN IS A HUB OF TALENTED PEOPLE
PAKISTAN IS A HUB OF TALENTED PEOPLE

ہر چیز میں ٹیک میں پاکستان کی صلاحیت کا اندازہ اس کے نوجوانوں کی لازوال صلاحیتوں سے لگایا جا سکتا ہے۔ پاکستان میں آئی ٹی کی صنعت، خواہ وہ تعلیمی لحاظ سے ہو یا پیشہ ورانہ، زیادہ تر نوجوان نسل کے ذریعے چلتی ہے۔ اس وقت پاکستان میں تقریباً 10 لاکھ فری لانسرز کام کر رہے ہیں، جن کی اکثریت کا تعلق کراچی، لاہور اور اسلام آباد کے بڑے شہروں سے ہے۔انٹرنیٹ، ڈیجیٹل میڈیا اور مختلف آن لائن گیگ پورٹلز کی بدولت پاکستان میں فری لانسرز کے لیے عالمی سطح پر رسائی حاصل کرنا کوئی مسئلہ نہیں ہے۔ ملک میں فری لانسنگ کی قیادت زیادہ تر 30 سال سے کم عمر کے نوجوان ذہنوں کے ہاتھ میں ہوتی ہے، جو کہ کل آبادی کا تقریباً 64 فیصد بنتا ہے۔ نوجوانوں کی کثرت کے بارے میں بات کریں!

مواد کی تحریر، گرافک ڈیزائننگ، آن لائن مارکیٹنگ، کولڈ کالنگ فار سیلز، لیڈ جنریشن، ویب اور ایپلیکیشن ڈیولپمنٹ، اور اے آئی اور مشین لرننگ پاکستان میں فری لانسرز یا بی پی او انڈسٹری کے لیے آؤٹ سورس کی جانے والی سب سے عام ملازمتیں ہیں، ان کی اعلیٰ کامیابی کی وجہ سے۔ شرح یہ دور دراز کے کارکن ملک کے لیے زرمبادلہ کماتے ہوئے اپنی خدمات یا مصنوعات کو بین الاقوامی مارکیٹ میں فروخت کرکے آمدنی پیدا کرتے ہیں۔

پاکستان میں کام کرنے کی جگہوں کا تصور
زیادہ تر لوگ کبھی کبھی بے چینی محسوس کرتے ہیں، یا جب گھر سے کام کرنے کی بات آتی ہے تو انہیں سست سمجھا جاتا ہے۔ مزید یہ کہ، اکیلے کام کرنا، بعض اوقات، آپ کو الگ تھلگ محسوس کر سکتا ہے۔ آن لائن کام کرتے وقت یہ تمام عوامل آپ کی کارکردگی کو منفی طور پر متاثر کر سکتے ہیں۔ لہٰذا، کو ورکنگ اسپیسز کا تصور پاکستان کے ساتھ ساتھ دنیا بھر میں فروغ پا رہا ہے کیونکہ یہ ہم خیال افراد کو ان کے آزاد طرز زندگی کو خطرے میں ڈالے بغیر اکٹھا کرتے ہیں۔ مزید یہ کہ، ان جگہوں پر ایسی سہولیات موجود ہیں جن کی پاکستان میں زیادہ تر گھرانوں میں کمی ہے جیسے کہ تیز رفتار انٹرنیٹ، پاور بیک اپ، اور مناسب کام کی جگہ۔

کراچی، لاہور اور اسلام آباد میں فری لانسرز کے ساتھ ساتھ چھوٹے پیمانے پر کاروباری افراد، اپنے پیشہ ورانہ کیریئر کے ساتھ آگے بڑھنے کے لیے سب سے بہترین جگہوں میں سے ایک کے طور پر کام کرنے والی جگہوں کو اپناتے ہیں۔ مشترکہ ورک اسپیس کے تصور کی توسیع پاکستان میں فری لانسنگ معیشت کی ترقی کے پیچھے ایک اہم وجہ ہے۔

پاکستانیوں کے لیے فری لانسنگ ویب سائٹس دستیاب ہیں۔
پاکستان کے فری لانسرز کے لیے متعدد فری لانسنگ ویب سائٹس دستیاب ہیں۔ آئیے مقامی فری لانسرز میں چار سب سے مشہور کو دریافت کریں۔

پاکستانیوں کے لیے فری لانسنگ ویب سائٹس دستیاب ہیں۔
پاکستانیوں کے لیے فری لانسنگ ویب سائٹس دستیاب ہیں۔

فری لانسر ڈاٹ کام

یقیناً دنیا کی سب سے پرانی اور قابل بھروسہ فری لانسنگ ویب سائٹس میں سے ایک، فری لانسر ڈاٹ کام نے ایک دہائی سے زیادہ عرصے سے عالمی فری لانسنگ انڈسٹری کو فائدہ پہنچایا ہے۔ پاکستان کے فری لانسرز کی ایک بڑی تعداد بھی فری لانسر ڈاٹ کام سے اپنی آمدنی پیدا کر رہی ہے۔ اس آن لائن فری لانسنگ پورٹل کا صدر دفتر سڈنی، آسٹریلیا میں ہے۔

اپ ورک

اس پلیٹ فارم میں 12 ملین سے زیادہ فعال فری لانسرز مختلف قسم کے جِگس کے لیے دستیاب ہیں۔ اپ ورک پر ہر سال تقریباً تیس لاکھ نوکریاں پوسٹ کی جاتی ہیں۔ ویب سائٹ پر رجسٹرڈ فری لانسر بننے کے لیے آپ کو اپنی متعلقہ مہارتوں اور تجربے کا ذکر کرنے والا پروفائل بنانا اور جمع کروانا ہوگا۔ ایک بار جب آپ کے پروفائل کا جائزہ لیا جاتا ہے اور اسے منظوری مل جاتی ہے، تو یہ دنیا بھر سے فری لانسرز تلاش کرنے والے لوگوں کے سامنے نظر آنا شروع ہو جائے گا۔

فائیور

فائیور ایک انتہائی مقبول فری لانسنگ فورم ہے جو پاکستان میں تقریباً ہر فری لانسر آن لائن پیسہ کمانے کے خواہاں ہے۔ اس کا شمار امریکہ کی 100 مقبول ترین ویب سائٹس میں بھی ہوتا ہے۔ آپ اپنی کلیدی صلاحیتوں کو فائیور پر گگس کی شکل میں بیچ سکتے ہیں۔ کم ترین اجرت جو ایک فری لانسرفائیور پر کما سکتا ہے $5 فی گیگ ہے۔

پیپل پر آور

پاکستانی فری لانسرز کی ایک بڑی تعداد پیپل پر آور پر رجسٹر ہو چکی ہے، جو کہ برطانیہ میں مقیم آن لائن فری لانسنگ کمیونٹی بہت مشہور ہے۔ ویب سائٹ آپ کو پریمیم پلان کے لیے سائن اپ کرنے کے لیے کہنے سے پہلے مختلف کلائنٹس کو 15 تجاویز مفت بھیجنے کی اجازت دیتی ہے۔ پیپل پر آور پر روزانہ سینکڑوں نوکریاں پوسٹ کی جاتی ہیں۔لہذا، اگر آپ نے پہلے ہی اپنی صلاحیتوں کی نشاندہی کر لی ہے، تو اوپر بیان کردہ پلیٹ فارمز میں سے کسی ایک پر سائن اپ کریں اور فری لانس کے طور پر آن لائن کمانا شروع کریں!

پاکستان میں پے پال کے متبادل
اگرچہ پے پال پاکستان کو سپورٹ نہیں کرتا، جو کہ آن لائن ادائیگیوں کے لیے سب سے زیادہ قابل اعتماد تاجر ہے، پاکستان میں فری لانسنگ مسلسل بڑھ رہی ہے اور اس میں کمی کے کوئی آثار نظر نہیں آ رہے ہیں۔ تاہم، پے پال کو پاکستان میں لانے کے لیے حکومتی اور انفرادی سطح پر کوششوں کی ضرورت ہے، اس لیے یہ صنعت پاکستان کی مجموعی معیشت کو مزید فائدہ پہنچا سکتی ہے۔ ابھی تک، پاکستانی فری لانسرز اپنے کلائنٹس سے آن لائن ادائیگیاں وصول کرنے کے لیے ادائیگی کے متبادل طریقوں پر انحصار کرتے ہیں۔

سکرل، ایکس-اوم، اور پے اونیر پاکستان میں پے پال کے وسیع پیمانے پر استعمال ہونے والے متبادلات میں سے ہیں۔ آن لائن ادائیگیوں کے لیے یہ تمام تاجر سادہ اور استعمال میں آسان ہیں۔ صرف ایک چیز جو پے پال کو ایک بہتر یا زیادہ قابل عمل آپشن بناتی ہے وہ یہ ہے کہ یہ فنڈز کی منتقلی پر دیگر تمام ادائیگیوں کے تاجروں کے مقابلے میں کم فیس کاٹتا ہے۔

پاکستان میں فری لانسنگ کا مستقبل کیا ہے؟

All You Need to Know About Freelancing in Pakistan
All You Need to Know About Freelancing in Pakistan

6,000 سے زیادہ آئی ٹی کمپنیوں اور 10 لاکھ فری لانسرز کے ساتھ، پاکستان دنیا میں ٹیک ملازمتوں کو آؤٹ سورس کرنے کے لیے مالی طور پر سب سے زیادہ پرکشش ملک ہے۔ اس وقت پاکستان میں فری لانسنگ انڈسٹری سے نصف بلین ڈالر سے زیادہ کی آمدنی ہوتی ہے۔ تاہم، اگر پاکستان میں فری لانسرز کی تعداد اسی رفتار سے بڑھتی رہی، اور حکومت فری لانسنگ کو آسان بنانے کے لیے مزید اقدامات کرتی ہے، تو اندازہ ہے کہ اگلے پانچ سالوں میں ریونیو 2.4 بلین ڈالر سے تجاوز کر جائے گا۔

Freelancing in Pakistan

The global Business Process Outsourcing (BPO) industry has been growing consistently since 2002, and this growth gave birth to the freelancing or online gig market. The BPO industry is predicted to hit $405.6 billion by 2027, due to a sizeable contribution by freelancers or the freelancing sector. Countries including India, China, the Philippines, and Pakistan, to call some, are among the countries receiving the bulk of outsourced work due to the vast availability of manpower and skills at a significantly lower price point. As far as Pakistan is worried, freelancing in Pakistan has progressed at an out-of-this-world pace.

From the mushrooming of outbound and inbound call centers to the growth of software houses, tech companies, and content mills, freelancers in Pakistan have cemented their position during this ultra-competitive industry. The success of Pakistan’s gig economy or freelancing industry in Pakistan in recent times was revealed in an exceedingly periodical report on the financial year 2018-19, released by the state bank of Pakistan. Pakistan stands proud jointly of the five most popular countries within the world of freelancing. because of the provision of contemporary technology and high-speed internet connections, people from different parts of Pakistan — even far-flung areas — are enabled to figure remotely and contribute to the economy of Pakistan.

Pakistan could be a Hub of Talented People
Pakistan’s potential all told things tech can be gauged from the inexhaustible talent displayed by its youth. The IT Industry in Pakistan, be it academically or professionally, is generally powered by the younger generation. Currently, almost one million freelancers are working in Pakistan, with the majority hailing from the megacities of Karachi, Lahore, and Islamabad.

Getting global exposure isn’t an issue for freelancers in Pakistan, because of the net, digital media, and various online gig portals. Freelancing within the country is mostly led by younger minds under the age of 30, which also makes up around 64% of the full population. speak about an abundance of youth! Content Writing, Graphic Designing, Online Marketing, Cold Calling for Sales, Lead Generation, Web, and Application Development, and AI and Machine Learning are a number of the foremost common jobs outsourced to freelancers or the BPO industry in Pakistan, thanks to their high success rate. These remote workers generate income by selling their services or products to the international market while earning foreign exchange for the country.

The Concept of Co-Working Spaces in Pakistan
Most people sometimes feel uneasy, awkward, or are perceived as lazy when it comes to acting from home all the time. Moreover, working alone can, at times, leave you feeling isolated. of these factors may affect your performance negatively when working online. Hence, the concept of co-working spaces is thriving in Pakistan also as around the world because they bring about like-minded individuals together without threatening their independent lifestyle. Moreover, these places have facilities that the majority of households in Pakistan lack like high-speed internet, power backup, and proper workspaces.

Freelancers, yet as small-scale entrepreneurs in Karachi, Lahore, and Islamabad, take co-working spaces as one of the foremost ideal places to induce going with their professional careers. The expansion of the concept of shared workspace is one of the key reasons behind the progress of the freelancing economy in Pakistan. On a side note, if you would like to find out more about the pros and cons of coworking spaces, don’t forget to read this blog.

Freelancing Websites Available to Pakistanis
There are multiple freelancing websites available to freelancers from Pakistan. Let’s explore the four most famous ones among local freelancers.

Freelancer.com

Arguably one every of the oldest and most trusted freelancing websites within the world, Freelancer.com has benefited the world freelancing industry for quite a decade. an outsized number of freelancers from Pakistan also are generating their income from Freelancer.com. This online freelancing portal is headquartered in Sydney, Australia.

Upwork

This platform has over 12 million active freelancers available for a spread of gigs. Around three million jobs are posted on Upwork each year. you wish to form and submit a profile mentioning your relevant skills and knowledge to become a registered freelancer on the website. Once your profile gets reviewed and approved, it’ll start appearing to people searching for freelancers from across the world.

Fiverr

Fiverr is a highly popular freelancing forum frequented by almost every freelancer in Pakistan looking to create money online. It’s also counted among the 100 most popular websites within the US. You’ll be able to sell your key skills on Fiverr within the sort of gigs. the lowest wage that a freelancer can earn on Fiverr is $5 per gig.

PeoplePerHour

A large number of Pakistani freelancers have registered on PeoplePerHour, which is a very fashionable UK-based online freelancing community. the website allows you to send 15 proposals to different clients at no cost before asking you to sign up for a premium plan. many jobs are posted on PeoplePerHour each day. So, if you have got already identified your skills, then sign on on one of the platforms mentioned above and begin earning online as a freelancer!

Alternatives to PayPal in Pakistan
Even though PayPal doesn’t support Pakistan, which is that the most reliable merchant for online payments, freelancing in Pakistan is consistently growing and is showing no signs of slowing down. However, efforts on both government and individual levels are required to bring PayPal to Pakistan, so this industry can further benefit the overall economy of Pakistan. As of now, Pakistani freelancers depend upon alternate payment methods for receiving payments online from their clients.

Skrill, Xoom, and Payoneer are among the widely used alternatives to PayPal in Pakistan. of these merchants for online payments are simple and simple to use. the sole thing that creates PayPal a stronger or more feasible option is that it deducts less amount of fee on funds transfer than all the opposite payment merchants.

What is the long run of Freelancing in Pakistan?

With over 6,000 IT companies and one million freelancers, Pakistan is that one of the foremost financially attractive countries to outsource tech jobs within the world. Currently, a revenue of over half a billion dollars is generated by the freelancing industry in Pakistan. However, if the number of freelancers in Pakistan continues to grow at this pace, and also the government takes more steps towards making freelancing easier, then it’s estimated that the revenue will cross the $2.4 billion mark over the subsequent five years.

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Check Also
Close
Back to top button