دیس پردیس کی خبریں

Pakistan seizes over 1000 bank accounts for crypto currency trading

پاکستان نے کرپٹو کرنسی ٹریڈنگ کے لیے 1000 سے زائد بینک اکاؤنٹس ضبط کر لیے

اطلاعات کے مطابق فیڈرل انویسٹی گیشن ایجنسی (ایف آئی اے) نے بٹ کوائن ٹریڈنگ کے لیے استعمال ہونے والے سینکڑوں بینک اکاؤنٹس اور کریڈٹ کارڈز ضبط کر لیے ہیں۔

ایجنسی نے اسلام آباد کے سائبر کرائم رپورٹنگ سینٹر کی درخواست کے جواب میں کارروائی کی۔ رپورٹس کے مطابق، ان اکاؤنٹس اور کارڈز سے ڈیجیٹل اثاثوں کے تبادلے جیسے بائینانس، کوائین بیس، اور کوائین ماما کے ذریعے تقریباً $300,000 کی ٹرانزیکشنز کی گئیں۔ایف آئی اے نے 1064 افراد کے اکاؤنٹس ضبط کر لیے۔ اشاعت کے مطابق، اس نے ان کے کریڈٹ کارڈز کو بھی غیر فعال کر دیا، جسے وہ ڈیجیٹل کرنسی کے حصول اور تجارت کے لیے استعمال کرتے تھے۔

اپریل 2018 میں، اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے اپنے بینکنگ پالیسی اینڈ ریگولیشن ڈیپارٹمنٹ کے ذریعے کرپٹو کرنسیوں کے حصول اور تجارت پر پابندی لگاتے ہوئے ایک سرکلر جاری کیا۔

Pakistan seizes over 1000 bank accounts for crypto currency trading

According to reports, the Federal Investigation Agency (FIA) has seized many bank accounts and credit cards used for bitcoin trading.

The agency acted in response to a call for participation from Islamabad’s Cyber Crime Reporting Center (CCRC). inline with reports, around $300,000 in transactions were made of these accounts and cards via digital asset exchanges like Binance, Coinbase, and Coinmama.

The FIA has confiscated accounts belonging to 1,064 people. It also disabled their credit cards, which they accustomed acquire and trade digital currency, in line with the publication. In April 2018, the banking company of Pakistan (SBP) issued a circular prohibiting the acquisition and trade of cryptocurrencies through its Banking Policy and Regulation Department.

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button
error: Content is protected !!