بریکنگ نیوز

Pakistan to Import LPG from Iran in Exchange of Rice

پاکستان چاول کے بدلے ایران سے ایل پی جی درآمد کرے گا۔

وزیر اعظم کے مشیر برائے تجارت و تجارت عبدالرزاق داؤد کے مطابق، پاکستان اور ایران نے چاول کی فروخت اور مائع پیٹرولیم گیس (ایل پی جی) خریدنے کے بارٹر ڈیل پر اتفاق کیا ہے۔

اس ماہ کے شروع میں تہران میں 9ویں مشترکہ تجارتی کمیٹی (جے ٹی سی) کے اجلاس کے دوران طے پانے والی مفاہمت کی یادداشت کے مطابق، پاکستان بارٹر ڈیل کے تحت چاول کے بدلے ایران سے ایل پی جی خریدے گا۔جے ٹی سی میں، دونوں فریقین نے 2023 تک دو طرفہ تجارت کو 5 بلین ڈالر تک بڑھانے پر اتفاق کیا۔

مزید برآں، داؤد نے کراچی پریس کلب میں منعقدہ ایک پریس کانفرنس میں اشارہ دیا کہ دونوں پڑوسی ممالک کے درمیان بارٹر کامرس ایک یا دو ماہ میں شروع ہو جائے گی۔

Pakistan to Import LPG from Iran in Exchange of Rice

Pakistan and Iran have agreed on a barter deal to sell rice and buy liquefied petroleum gas (LPG), consistent with Abdul Razak Dawood, Adviser to Prime Minister on Trade and Commerce.

According to a memorandum of understanding reached during the 9th Joint Trade Committee (JTC) meeting in Tehran earlier this month, Pakistan would buy LPG from Iran in exchange for rice under the barter deal. At the JTC, each side agreed to grow bilateral trade to $5 billion by 2023.

Moreover, Dawood indicated at a conference held at the Karachi Press Club that barter commerce between the 2 neighboring countries would begin during a month or two.

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Back to top button