اسلامک

Who removed the Black Stone from the Khana Kaba

جس نے خانہ کعبہ سے حجر اسود کو ہٹایا

کیا آپ جاننا پسند کرتے ہیں کہ خانہ کعبہ سے حجر اسود کو کس نے ہٹایا؟ ذوالحجہ 317ھ کو بحرین کے حکمران ابو طاہر سلیمان قراماتی نے مکہ پر قبضہ کیا۔ ہم اللہ ہی کے ہیں اور اسی کی طرف لوٹ کر جانا ہے۔ اسلام میں یہ پہلا موقع تھا کہ حج بیت اللہ کو روکا گیا۔ یہ ابو طاہر القرماتی ہی تھے جو کعبہ سے حجر اسود کو ہٹا کر بحرین لے گئے۔

بنو عباس کے خلیفہ مقتدر باللہ نے ابو طاہر قراماتی سے فیصلہ کیا اور اسے 30,000 دینار دیئے۔ پھر حجر اسود کو خانہ کعبہ میں واپس کر دیا گیا۔ یہ واپسی 339ھ میں ہوئی۔ خانہ کعبہ 22 سال سے حجر اسود سے خالی تھا۔ جب یہ طے پایا کہ حجر اسود کو واپس کیا جائے گا تو خلیفہ وقت نے عظیم عالم شیخ عبداللہ کو حجر اسود کو جمع کرنے کے لیے وفد کے ساتھ بحرین بھیجا ۔

حجر اسود کی 2 نشانیاں
یہ واقعہ علامہ سیوطی کی روایت سے اس طرح نقل ہوا ہے کہ جب شیخ عبداللہ بحرین پہنچے تو بحرین کے حاکم نے ایک تقریب کا اہتمام کیا جس میں حجر اسود کو ان کے حوالے کیا گیا اور اس پتھر کو ان کے لیے خوشبو لگایا گیا۔خوبصورت غلاف سے نکالا گیا کہ یہ کالا پتھر ہے۔ محدث عبداللہ نے کہا کہ نہیں حجر اسود میں دو نشانیاں ہیں۔ یہ کالا پتھر ہو گا اگر یہ پتھر اس معیار پر پورا اترتا ہے اور ہم اسے لے لیں گے۔

نمبر1:پہلی علامت یہ ہے کہ یہ پانی میں نہیں ڈوبتا

نمبر2:دوسری یہ کہ یہ آگ سے گرم نہیں ہوتا۔

اب جب پتھر کو پانی میں ڈالا گیا تو وہ ڈوب گیا اور پھر جب اسے آگ میں ڈالا گیا تو وہ بہت گرم ہو گیا۔ اس نے کہا ہم اصل کالا پتھر لے جائیں گے۔ پھر اصلی کالا پتھر لا کر آگ میں ڈالا گیا، وہ ٹھنڈا ہو گیا۔ پھر اسے پانی میں ڈالا گیا اور وہ پھول کی طرح پانی پر تیرنے لگا۔تو کہا کہ یہ جنت کا پتھر ہے۔اس وقت ابو طاہر قرامطی حیران ہوئے اور کہنے لگے یہ الفاظ آپ کو کہاں سے ملے؟ محدث عبداللہ کہتے ہیں کہ ہمیں رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم سے یہ کلمات موصول ہوئے ہیں کہ حجر اسود نہ پانی میں ڈوبے گا اور نہ اسے آگ سے گرم کیا جائے گا۔

جب مسلمانوں کو حجر اسود ملا تو اسے ایک کمزور اونٹ پر لاد کر کعبہ کی طرف لے گیا۔ اس اونٹ نے زبردست طاقت حاصل کی کیونکہ حجر اسود اپنے مرکز بیت اللہ کی طرف جا رہا تھا۔البتہ جب اسے خانہ کعبہ سے نکال کر بحرین لے جایا جاتا تو جس اونٹ پر لادا جاتا وہ مر جاتا تھا۔ بحرین پہنچنے سے پہلے ہی اس کے نیچے 40 اونٹ مر گئے۔

Who removed the Black Stone from the Khana Kaba

On Dhul Hijjah 317 A.H. Abu Tahir Sulaiman Qaramati, the ruler of Bahrain, captured Makkah. To Allah, we belong and to Him, we shall return. This was the primary time in Islam that Hajj Baitullah was stopped. it absolutely was Abu Tahir Al Qaramati who removed the black stone from the Kabah and took it with him to Bahrain.

The caliph of Banu Abbas, Muqtadir Ballah decided with Abu Tahir Qaramati and gave him 30,000 dinars. Then the black stone was returned to the Kabah. This return happened in 339A.H. The Kabah had been destitute of the black stone for 22 years. When it had been decided that the Black Stone would be returned the Caliph of the time sent the nice scholar Sheikh Abdullah to Bahrain with the delegation to gather the Black Stone.

2 Signs of Black Stone
This incident was narrated from the narration of Allama Suyuti in such how that when Sheikh Abdullah reached Bahrain, the ruler of Bahrain arranged a ceremony within which the black stone was handed over to him and therefore the stone was perfumed for him. It was taken out of the attractive cover that it’s a black stone. Muhaddith Abdullah said, no there are two signs within the black stone. it’ll be the Black Stone if this stone meets this standard and that we will take it.

The first sign is that it doesn’t sink in water and therefore the second is that it doesn’t get hot from the fire.

Now when the stone was thrown into the water, it sank then when it absolutely was thrown into the Fire it became highly regarded. He said we are going to take the first black stone. Then the first black stone was brought and put into the fireplace, it cooled down. Then it absolutely was poured into the water and it floated on the water sort of a flower. is that the adornment of and this is often the stone of paradise?

At that point, Abu Tahir Qaramati was surprised and said, where did you get these words from? Muhaddith Abdullah said we’ve got received these words from the Holy Prophet (p.b.u.h.) that the Black Stone won’t sink in water and can not be heated by fire.

When the Muslim found the Black Stone, it absolutely was loaded onto a weak camel which hurried it to the Kabah. This camel gained tremendous strength because the Black Stone was on its thanks to its center Baitullah. However, when it had been taken out of the Kabah and brought to Bahrain, the camel on which it had been loaded would die. Even before reaching Bahrain, 40 camels died under that.

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Back to top button