PROPERTY

How to Draft and Register a Relinquishment Deed in Pakistan

پاکستان میں استعفیٰ کا مسودہ تیار اور رجسٹر کرنے کا طریقہ

How to Draft and Register a Relinquishment Deed in Pakistan

If you’re planning on transferring immovable property in Pakistan, especially between members of the family, you would possibly register a relinquishment deed to complete the method. It is very like a sale deed and gift deed, relinquishment deed is one among the most ways someone can transfer their property by surrendering their own rights, title, and interest.

To put it simply, a relinquishment deed may be an instrument that’s drawn when a private formally gives up their legal rights on an inherited property by relinquishing it within the name of another co-owner. However, it’s important to know that relinquishment of rights in immovable property is just valid when the transfer is finished between the co-owners of a jointly-held, inherited property. As an example, if two brothers inherit a chunk of land from their deceased father, one in every one of them may renounce his share within the inheritance to create the opposite of its sole owner. This can be usually done when the parent passes away without making a will and therefore the property is inherited by the legal heirs.

WHO CAN RELINQUISH THEIR RIGHTS ON A PROPERTY?
An individual can only relinquish property to someone who already encompasses a share within the said property. Just in case there are over two co-owners or shareholders, any of them can relinquish their rights in favor of others with their consent.

This means both parties, the benefactor and therefore the recipient, have to have some percentage of shares or rights in an exceedingly joint-owned property. This is often usually finished inherited properties, where all the co-owners are legal heirs. You cannot relinquish your property in favor of a non-owner, alternatively, it’ll be treated as a present.

THE DIFFERENCE BETWEEN RELINQUISHMENT DEED, GIFT DEED, AND SALE DEED
The difference between relinquishment deed and sale deed is pretty clear. A purchase deed may be a document or an instrument that proves a seller has transferred ownership, right, and title of a property to a buyer for a particular price. However, relinquishment deeds describe the transfer of rights from one co-owner to a different in an exceedingly joint-owned property.

As for the difference between relinquishment deed and gift deed, one can gift their property to anyone within their life no matter their relationship with them. You’ll also take a glance at our detailed orient a way to register a present deed in Pakistan for more information on the subject. On the opposite hand, one can only relinquish their share in a very property in favor of another share-holder.

Moreover, relinquishment is often through with or without compensation, whereas a present doesn’t require any monetary return. Nevertheless, rather like the gift and sale deeds, a relinquishment deed also must be signed by both the benefactor and also the beneficiary. It also has to be registered.

DRAFTING A RELINQUISHMENT DEED
There is no set relinquishment deed format in Pakistan. However, since a deed of relinquishment must be in writing to be valid, there are some belongings you must include while drafting it. Here may be a list of details and documents required for relinquishment deeds in Pakistan:

  • Title of the document and also the date it had been created.
  • The full name, CNIC number, address, father or spouse’s name, and other details of the person executing the deed.
  • The full name, CNIC number, address, father or spouse’s name, and other details of the person receiving the rights to the property.
  • A detailed description of the immovable property, like its location, allotment details, and such.
  • Details of the opposite legal heirs, if any.
  • Details of the shares owned by the opposite heirs, if any.
  • Documents to prove ownership rights of the property.
  • The reason for the relinquishment must even be stated so as to prove there was no fraud or coercion involved within the process.
  • Usually, the document also contains a clause stating that the person executing it won’t have any rights on the property once the relinquishment deed is finalized. It’s irrevocable.
  • The document must also mention if the executant is making relinquishment deed inconsiderately or if some monetary transaction was involved.
  • The deed must be signed by all the parties/legal heirs together with two witnesses.
  • The current valuation of the property may be stated within the relinquishment deed.
  • The essentials mentioned above can vary on a case-to-case basis. Therefore, it’s suggested to consult a lawyer to draft a relinquishment deed in Pakistan.

Furthermore, transferring property by means of a gift deed or relinquishment deed comes under Capital Value Tax, which is usually spoken as CVT. You’ll be able to learn more about it in our comprehensive guide of differing kinds of property taxes in Pakistan. Additionally thereto, you’ll be able to also take a glance at differing kinds of property fees applicable in Pakistan for further clarification on the matter.

REGISTERING A RELINQUISHMENT DEED

The process of relinquishment deed registration is fairly simple and easy. Much like registering a present deed, one must fix a date for registration within the office of the concerned sub-registrar and pay the stamp tax on the relinquishment deed. The complete process takes between two to four working days on average.

CAN A RELINQUISHMENT DEED BE CHALLENGED IN COURT?
A relinquishment deed is challenged in court and even canceled if there seems to be any fraud, misrepresentation, or coercion involved within the process.

THE VALIDITY OF RELINQUISHMENT DEED
Once signed and registered, relinquishment deeds are irrevocable. Meanwhile, just in case you’re inquisitive about investing within the property sector but don’t know where to start, ensure to test out the fundamentals of realty investment in Pakistan to achieve success at the trade. If you’re new to the industry and are having trouble understanding the 000 estate jargon employed by agents and experts, our glossary of common property terms utilized in Pakistan will certainly facilitate your out.

پاکستان میں استعفیٰ کا مسودہ تیار اور رجسٹر کرنے کا طریقہ

اگر آپ پاکستان میں غیر منقولہ جائیداد کی منتقلی کا منصوبہ بنا رہے ہیں، خاص طور پر خاندان کے افراد کے درمیان، تو آپ کو اس عمل کو مکمل کرنے کے لیے استعفیٰ کا عمل رجسٹر کرنے کی ضرورت پڑ سکتی ہے۔ سیل ڈیڈ اور گفٹ ڈیڈ کی طرح، ترک کرنے کا عمل ان اہم طریقوں میں سے ایک ہے جس سے کوئی شخص اپنے حقوق، ٹائٹل اور مفاد کو حوالے کر کے اپنی جائیداد کو منتقل کر سکتا ہے۔

اسے سادہ لفظوں میں بیان کرنے کے لیے، ترک کرنے کا عمل ایک قانونی دستاویز ہے جو اس وقت تیار کی جاتی ہے جب کوئی فرد کسی دوسرے شریک مالک کے نام سے وراثت میں ملنے والی جائیداد پر اپنے قانونی حقوق کو باضابطہ طور پر ترک کر دیتا ہے۔تاہم، یہ سمجھنا ضروری ہے کہ غیر منقولہ جائیداد میں حقوق سے دستبرداری صرف اس صورت میں درست ہے جب منتقلی مشترکہ طور پر ملکیت، وراثت میں ملنے والی جائیداد کے شریک مالکان کے درمیان کی جاتی ہے۔ مثال کے طور پر، اگر دو بھائیوں کو اپنے فوت شدہ باپ سے زمین کا ایک ٹکڑا ملتا ہے، تو ان میں سے ایک وراثت میں اپنا حصہ چھوڑ کر دوسرے کو اس کا واحد مالک بنا سکتا ہے۔ یہ عام طور پر اس وقت کیا جاتا ہے جب والدین وصیت کیے بغیر انتقال کر جاتے ہیں اور جائیداد قانونی ورثاء کو وراثت میں ملتی ہے۔

کون جائیداد پر اپنے حقوق سے دستبردار ہو سکتا ہے؟
ایک فرد صرف کسی ایسے شخص کو جائیداد چھوڑ سکتا ہے جس کا مذکورہ جائیداد میں پہلے سے حصہ ہو۔ اگر دو سے زیادہ شریک مالکان یا شیئر ہولڈرز ہیں، تو ان میں سے کوئی بھی اپنی رضامندی سے دوسروں کے حق میں اپنے حقوق سے دستبردار ہو سکتا ہے۔اس کا مطلب ہے کہ دونوں فریقین، فائدہ اٹھانے والے اور وصول کنندہ کو، مشترکہ ملکیت والی جائیداد میں کچھ فیصد حصص یا حقوق حاصل کرنے کی ضرورت ہے۔ یہ عام طور پر وراثت میں ملنے والی جائیدادوں کے لیے کیا جاتا ہے، جہاں تمام شریک مالکان قانونی وارث ہوتے ہیں۔آپ اپنی جائیداد کسی غیر مالک کے حق میں نہیں چھوڑ سکتے، ورنہ اسے تحفہ سمجھا جائے گا۔

دستبرداری کی ڈیڈ، تحفہ ڈیڈ اور سیل ڈیڈ میں فرق
ترک کرنے کے عمل اور فروخت کے عمل میں فرق بالکل واضح ہے۔ سیل ڈیڈ ایک قانونی دستاویز یا ایک ایسا آلہ ہے جو یہ ثابت کرتا ہے کہ بیچنے والے نے جائیداد کی ملکیت، حق اور ٹائٹل خریدار کو ایک خاص قیمت پر منتقل کر دیا ہے۔ تاہم، دستبرداری کے اعمال مشترکہ ملکیت والی جائیداد میں ایک شریک مالک سے دوسرے کو حقوق کی منتقلی کو بیان کرتے ہیں۔

جہاں تک دستبرداری کے عمل اور تحفہ کے عمل کے درمیان فرق کا تعلق ہے، کوئی شخص اپنی زندگی میں کسی کو بھی اپنی جائیداد تحفہ میں دے سکتا ہے چاہے اس کے ساتھ اس کا تعلق کچھ بھی ہو۔ اس موضوع پر مزید معلومات کے لیے آپ پاکستان میں گفٹ ڈیڈ کو رجسٹر کرنے کے طریقہ سے متعلق ہماری تفصیلی گائیڈ پر بھی ایک نظر ڈال سکتے ہیں۔ دوسری طرف، کوئی شخص کسی دوسرے شیئر ہولڈر کے حق میں صرف جائیداد میں اپنا حصہ چھوڑ سکتا ہے۔مزید برآں، ترک کرنا معاوضے کے ساتھ یا اس کے بغیر کیا جا سکتا ہے، جبکہ تحفہ کے لیے کسی رقم کی واپسی کی ضرورت نہیں ہوتی ہے۔ بہر حال، ہدیہ اور فروخت کے اعمال کی طرح، دستبرداری کے ڈیڈ پر بھی فائدہ اٹھانے والے اور فائدہ اٹھانے والے دونوں کے دستخط کرنے کی ضرورت ہے۔ اس کی رجسٹریشن بھی ضروری ہے۔

استعفیٰ کا مسودہ تیار کرنا
پاکستان میں استعفیٰ کا کوئی مقررہ فارمیٹ نہیں ہے۔تاہم، چونکہ دستبرداری کا عمل درست ہونے کے لیے تحریری طور پر ہونا ضروری ہے، اس لیے اس کا مسودہ تیار کرتے وقت آپ کو کچھ چیزیں شامل کرنا ضروری ہیں۔پاکستان میں دستبرداری کے اعمال کے لیے درکار تفصیلات اور دستاویزات کی فہرست یہ ہے

نمبر 1: دستاویز کا عنوان اور اس کی تخلیق کی تاریخ۔
نمبر 2: مکمل نام، سی این آئی سی نمبر، پتہ، والد یا شریک حیات کا نام اور عمل کو انجام دینے والے شخص کا دیگر تفصیلات۔
نمبر 3: جائیداد کے حقوق حاصل کرنے والے شخص کا پورا نام، سی این آئی سی نمبر، پتہ، والد یا شریک حیات کا نام اور دیگر تفصیلات۔
نمبر 4: غیر منقولہ جائیداد کی تفصیلی وضاحت، جیسے کہ اس کا مقام، الاٹمنٹ کی تفصیلات، وغیرہ۔
نمبر 5: دیگر قانونی وارثوں کی تفصیلات، اگر کوئی ہے۔
نمبر 6: دوسرے وارثوں کے حصص کی تفصیلات، اگر کوئی ہے۔
نمبر 7: جائیداد کے مالکانہ حقوق کو ثابت کرنے کے لیے دستاویزات۔
نمبر 8: دستبرداری کی وجہ بھی بیان کی جانی چاہیے تاکہ یہ ثابت ہو سکے کہ اس عمل میں کوئی دھوکہ دہی یا زبردستی شامل نہیں تھی۔
نمبر 9: عام طور پر، دستاویز میں ایک شق بھی ہوتی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ اس پر عمل کرنے والے شخص کا جائیداد پر کوئی حق نہیں ہو گا ایک بار جب دستبرداری کا عمل طے پا جائے۔ یہ اٹل ہے۔
نمبر 10: دستاویز میں اس بات کا بھی ذکر ہونا چاہیے کہ آیا ایگزیکیوٹینٹ بغیر کسی غور و فکر کے استعفیٰ دے رہا ہے یا کچھ مالیاتی لین دین اس میں شامل تھا۔
نمبر 11: دستاویز پر تمام فریقین/ قانونی ورثاء کے ساتھ دو گواہوں کے دستخط ہونے چاہئیں۔
نمبر 12: جائیداد کی موجودہ قیمت بھی ترک کرنے کے عمل میں بیان کی جا سکتی ہے۔

مندرجہ بالا ضروری چیزیں کیس ٹو کیس کی بنیاد پر مختلف ہو سکتی ہیں۔ لہٰذا، پاکستان میں استعفیٰ کا مسودہ تیار کرنے کے لیے کسی وکیل سے مشورہ کرنے کا مشورہ دیا جاتا ہے۔مزید برآں، گفٹ ڈیڈ یا استعفیٰ ڈیڈ کے ذریعے جائیداد کی منتقلی کیپٹل ویلیو ٹیکس کے تحت آتی ہے، جسے عام طور پر سی وی ٹی کہا جاتا ہے۔ آپ پاکستان میں پراپرٹی ٹیکس کی مختلف اقسام کے بارے میں ہماری جامع گائیڈ میں اس کے بارے میں مزید جان سکتے ہیں۔ اس کے علاوہ، آپ اس معاملے پر مزید وضاحت کے لیے پاکستان میں لاگو ہونے والی پراپرٹی فیس کی مختلف اقسام پر بھی ایک نظر ڈال سکتے ہیں۔

استعفیٰ کا عمل رجسٹر کرنا
استعفیٰ ڈیڈ رجسٹریشن کا عمل کافی آسان اور سیدھا ہے۔ گفٹ ڈیڈ کو رجسٹر کرنے کی طرح، کسی کو متعلقہ سب رجسٹرار کے دفتر میں رجسٹریشن کے لیے ایک تاریخ طے کرنی ہوگی اور استعفیٰ ڈیڈ پر اسٹامپ ڈیوٹی ادا کرنی ہوگی۔ اس پورے عمل میں اوسطاً دو سے چار کام کے دن لگتے ہیں۔

کیا استعفیٰ کے قانون کو عدالت میں چیلنج کیا جا سکتا ہے؟
دستبرداری کے عمل کو عدالت میں چیلنج کیا جا سکتا ہے اور یہاں تک کہ اگر ایسا لگتا ہے کہ اس عمل میں کوئی دھوکہ دہی، غلط بیانی یا زبردستی شامل ہے۔

استعفیٰ کے عمل کی درستگی
ایک بار دستخط اور رجسٹر ہونے کے بعد، ترک کرنے کے اعمال اٹل ہوتے ہیں۔ دریں اثنا، اگر آپ پراپرٹی کے شعبے میں سرمایہ کاری کرنے میں دلچسپی رکھتے ہیں لیکن نہیں جانتے کہ کہاں سے شروع کرنا ہے، تو تجارت میں کامیاب ہونے کے لیے پاکستان میں رئیل اسٹیٹ کی سرمایہ کاری کی بنیادی باتوں کو دیکھنا یقینی بنائیں۔ اگر آپ انڈسٹری میں نئے ہیں اور آپ کو ایجنٹوں اور ماہرین کے ذریعے استعمال کیے جانے والے رئیل اسٹیٹ کی اصطلاح کو سمجھنے میں دشواری ہو رہی ہے، تو پاکستان میں استعمال ہونے والی جائیداد کی مشترکہ اصطلاحات کی ہماری لغت یقیناً آپ کی مدد کرے گی۔

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Back to top button