TOURISM

Winter Sports Activities: Best Ski Resorts in Pakistan

November usually marks the start of winter sports activities in Pakistan, skiing, particularly. Gliding down the slopes of snow-covered mountains, battling rough climatic conditions, and avoiding avalanche-prone areas is what makes skiing an exciting sport.

Are you searching for an adventurous trip this winter? If yes, then this blog is supposed for you as we’ve carefully chosen a number of the foremost popular ski resorts in Pakistan.

The Best Ski Resorts in Pakistan

For winter sports lovers, now could be the time to pack your boots and skiing essentials for a memorable trip up to the northern areas of Pakistan. These are a number of the foremost well-reviewed ski resorts in Pakistan you need to try.

  1. Malam Jabba ski resort
  2. Naltar Valley ski resort
  3. Nathiagali ski resort
  4. Astore Valley ski resort
  5. Fairy Meadows ski resort
  6. Shimshal ski resort

Malam Jabba ski resort

Malam Jabba ski resort
Malam Jabba ski resort

Malam Jabba ski resort is the most beautiful ski resort situated within the Hindu Kush range of Swat Valley located 9,199 ft. above water level. it’s situated 40 km east of Saidu Sharif and 314 km northwest of Islamabad. One of the oldest ski resorts in Pakistan, Malam Jabba ski resort is partly functional at the instant because it is being renovated. The spot offers a number of the simplest snow conditions for skiers within the region. During winters, when the snow is thick and firm, skiers have an exciting time playing snow sports at Malam Jabba.

People can enjoy snow tubing, skiing, and skating on top of the snow-clad peak. There are two 800 meter ski runs and maintained pistes that supply different varieties of difficulty levels both for beginners and professionals.

There are four chairlifts that are reconstructed. Besides this, Malam Jabba ski resort will soon offer a 60-room five-star hotel. An ice skating rink is additionally being developed. The Ghorband Valley trekking trail and Siboney Valley trekking trail are now open.

Malam Jabba attracts national furthermore as international skiers. The skiing season in Malam Jabba usually starts in January and ends in March. The resort is additionally accessible via road from Islamabad. It’s almost a 6-hour drive.

Distance from the airport

You can get to Malam Jabba via Peshawar International Airport. From the airport, a 3-hour drive will take you to Mingora. From there, you’ll get to the Malam Jabba top in nearly two hours by road.

Naltar Valley ski resort

Naltar Valley ski resort
Naltar Valley ski resort

Located within the Karakoram chain of mountains of Naltar Valley, in Gilgit-Baltistan, Naltar ski resort is one of the foremost popular ski areas in Pakistan. It’s at a top elevation of two,950 meters and has served because of the main facility for the Ski Federation of Pakistan.

Besides this Pakistan National Ski Championship was also held here, where international skiers gathered from across the world to participate in ski races and test their skiing skills on the slopes of Naltar ski resort. There are different winter activities in Pakistan like snowboarding, ice skating, and hockey competitions that are held at the Naltar ski resort.

Distance from airport

Those traveling to the current destination need to get to Gilgit Airport first. After covering 43 km, which may be a 2-hour drive, you’ll reach Naltar Valley ski resort.

Nathiagali ski resort

Nathiagali ski resort
Nathiagali ski resort

Do you know there’s a ski facility even in Nathiagali? People who live in Islamabad and head over to Nathiagali on a weekend can do the identical even in winters, albeit there’ll be snow-clad mountains awaiting to welcome you. This can be an ideal skiing spot for beginners in Pakistan. The wonders of the snow-covered pine forests are breathtaking.

There is a slope of 200 meters with beautiful, enchanting views of Miranjani and Mukshpuri mountains. One of the most-visited ski facilities in Pakistan, there’s also a lift for taking the athletes to the highest. The traveling time to Nathiagali is merely 2 to 2.5 hours from Islamabad.

So, Islambadians! What are you waiting for? Pack your ski boots and ski gear and head over to the pristine white slopes of Nathiagali for an experience of a lifetime. the most effective time to travel skiing in Nathiagali is December and January.

Distance from airport

Those traveling to Nathiagali ski resort can reach Islamabad International Airport by air. From there it’d take around 3 hours by jeep. This makes it about 158 km of distance to achieve.

Astore Valley ski resort

Astore Valley ski resort
Astore Valley ski resort

Another hidden paradise in Gilgit, the Astore Valley is at the face of Nanga Parbat, which is nearly 8,126 meters above sea level. Rattu could be a small village town located within the Astore District.

Rattu is home to adventure sports, having a natural skiing slope and it also provides adequate facilities for training in winter sports in Pakistan. It’s one of the best skiing spots for beginners in Pakistan.

Distance from airport

Astore Valley ski resort is about 160 km off from Gilgit Airport. By jeep, it can take you around four hours to urge to your destination.

Fairy Meadows ski resort

Fairy Meadows ski resort
Fairy Meadows ski resort

Nanga Parbat sets the backdrop for the enchanting Fairy Meadows, where you’ll be able to glide through the snow-covered slopes. You may trek to Fairy Meadows as there aren’t any chair lifts. The most effective time to ski at Fairy Meadows is from mid-December to March. You won’t find proper accommodation here and lots of individuals depend upon huts there for an overnight stay. Recommended for those that love trekking and skiing both.

Distance from airport

Fairy Meadows ski resort is about 92 km far away from Gilgit Airport. If you’re taking a jeep to your destination, you’re certain a 3-hour drive.

Shimshal ski resort

Shimshal ski resort
Shimshal ski resort

Located within the north of Hunza Valley, Shimshal ski resort is one of the foremost popular ski resorts in Pakistan. If you’re traveling from Islamabad, then it’d take 22 hours to achieve Hunza by car.

You should spend the night at Hunza to acclimatize yourself to the high altitude of two,500 meters above sea level. In the morning, take a four-hour drive and you’ll reach Shimshal Valley, which is nearly 3,100 meters above sea level.

To reach Shimshal ski resort, you would like to further trek for around six hours before you reach your destination. It should not be one of every of the easy-to-access ski resorts in Pakistan, due to its location. But it definitely is one of the foremost popular ski resorts in Pakistan.

International skiers from Austria have also conducted a ski training camp at Shimshal ski resort. Ski instructors Stefan Ager and Andreas Gumpenberger trained amateur skiers proper skills for the popular winter sport during a 10-day skiing workshop in 2016.

Distance from airport

The distance to achieve Shimshal ski resort from Gilgit Airport is nearly 207 km. That’s almost a 6-hour drive if you’re taking a jeep.

So, this was our pick of a number of the most effective places to spend winters in Pakistan. If you’re planning a visit to the northern areas this winter, then ensure you experience the fun of skiing within the snow-dipped slopes of Pakistan’s famous ski resorts.

موسمِ سرما میں کھیلوں کی سرگرمیاں: پاکستان میں بہترین سکائی ریزورٹس

نومبر میں عموماً پاکستان میں موسم سرما کے کھیلوں کی سرگرمیوں کا آغاز ہوتا ہے، خاص طور پر اسکیئنگ۔ برف سے ڈھکے پہاڑوں کی ڈھلوانوں سے نیچے کی طرف لپکنا، خراب موسمی حالات سے لڑنا، اور برفانی تودے کے شکار علاقوں سے بچنا اسکیئنگ کو ایک سنسنی خیز کھیل بنا دیتا ہے۔ کیا آپ اس موسم سرما میں ایک مہم جوئی کے سفر کی تلاش میں ہیں؟ اگر ہاں، تو یہ بلاگ آپ کے لیے ہے کیونکہ ہم نے پاکستان کے چند مشہور سکائی ریزورٹس کا انتخاب احتیاط سے کیا ہے۔

پاکستان میں بہترین سکی ریزورٹس

موسم سرما کے کھیلوں کے شائقین کے لیے، اب وقت آگیا ہے کہ پاکستان کے شمالی علاقوں کے یادگار سفر کے لیے اپنے جوتے اور اسکیئنگ کے لوازمات کو پیک کریں۔

یہ پاکستان میں سب سے اچھی طرح سے نظرثانی شدہ سکی ریزورٹس ہیں جنہیں آپ ضرور دیکھیں۔

نمبر1:مالم جبہ سکی ریزورٹ
نمبر2:نلتر ویلی سکی ریزورٹ
نمبر3:نتھیاگلی سکی ریزورٹ
نمبر4:استور ویلی سکی ریزورٹ
نمبر5:فیئری میڈوز سکی ریزورٹ
نمبر6:شمشال سکی ریزورٹ

مالم جبہ سکی ریزورٹ
مالم جبہ سکی ریزورٹ وادی سوات کے ہندوکش رینج میں واقع سب سے خوبصورت سکی ریزورٹ ہے، جو سطح سمندر سے 9,199 فٹ بلندی پر واقع ہے۔ یہ سیدو شریف سے 40 کلومیٹر مشرق میں اور اسلام آباد سے 314 کلومیٹر شمال مغرب میں واقع ہے۔ پاکستان کے قدیم ترین سکی ریزورٹس میں سے ایک، مالم جبہ سکی ریزورٹ اس وقت جزوی طور پر کام کر رہا ہے، کیونکہ اس کی تزئین و آرائش کی جا رہی ہے۔ یہ جگہ اس خطے میں اسکیئرز کے لیے برف کے کچھ بہترین حالات پیش کرتا ہے۔ سردیوں کے دوران، جب برف موٹی اور مضبوط ہوتی ہے، اسکائیرز کے لیے مالم جبہ میں برف کے کھیل کھیلنے کا دلچسپ وقت ہوتا ہے۔

لوگ برف پوش چوٹی کے اوپر اسنو ٹیوبنگ، اسکیئنگ اور اسکیٹنگ سے لطف اندوز ہوسکتے ہیں۔ یہاں دو 800 میٹر سکی رن اور مینٹینڈ پیسٹ ہیں جو ابتدائی اور پیشہ ور افراد دونوں کے لیے مختلف قسم کی مشکل کی سطح پیش کرتے ہیں۔

چار چیئر لفٹیں ہیں جن کی تعمیر نو کی گئی ہے۔ اس کے علاوہ مالم جبہ سکی ریزورٹ جلد ہی 60 کمروں پر مشتمل فائیو سٹار ہوٹل پیش کرے گا۔ ایک آئس سکیٹنگ رنک بھی تیار کیا جا رہا ہے۔ غوربند ویلی ٹریکنگ ٹریل اور سبونی ویلی ٹریکنگ ٹریل اب کھلی ہوئی ہے۔

مالم جبہ قومی اور بین الاقوامی اسکائیرز کو راغب کرتا ہے۔ مالم جبہ میں اسکیئنگ کا سیزن عام طور پر جنوری سے شروع ہوتا ہے اور مارچ میں ختم ہوتا ہے۔ ریزورٹ اسلام آباد سے سڑک کے ذریعے بھی قابل رسائی ہے۔ یہ تقریباً 6 گھنٹے کی ڈرائیو ہے۔

ہوائی اڈے سے فاصلہ

آپ پشاور انٹرنیشنل ایئرپورٹ کے ذریعے مالم جبہ جا سکتے ہیں۔ ہوائی اڈے سے، 3 گھنٹے کی ڈرائیو آپ کو مینگورہ لے جائے گی۔ وہاں سے، آپ سڑک کے ذریعے تقریباً دو گھنٹے میں مالم جبہ کی چوٹی پر پہنچ سکتے ہیں۔

نلتر ویلی سکی ریزورٹ
گلگت بلتستان میں وادی نلتر کے قراقرم پہاڑی سلسلے میں واقع، نلتر سکی ریزورٹ پاکستان کے سب سے مشہور سکی علاقوں میں سے ایک ہے۔ یہ 2,950 میٹر کی اونچائی پر ہے اور اس نے سکی فیڈریشن آف پاکستان کے لیے اہم سہولت کے طور پر کام کیا ہے۔

اس کے علاوہ یہاں پاکستان نیشنل سکی چیمپئن شپ کا بھی انعقاد کیا گیا جس میں دنیا بھر سے بین الاقوامی سکیرز سکی ریس میں حصہ لینے اور نلتر سکی ریزورٹ کی ڈھلوانوں پر اپنی سکینگ کی مہارت کو جانچنے کے لیے جمع ہوئے۔ پاکستان میں موسم سرما کی مختلف سرگرمیاں ہیں جیسے سنو بورڈنگ، آئس سکیٹنگ اور آئس ہاکی کے مقابلے جو کہ نلتر سکی ریزورٹ میں منعقد ہوتے ہیں۔

ہوائی اڈے سے فاصلہ

اس منزل پر جانے والوں کو پہلے گلگت ائیر پورٹ پہنچنا ہوگا۔ 43 کلومیٹر کا فاصلہ طے کرنے کے بعد، جو کہ 2 گھنٹے کی ڈرائیو ہو سکتی ہے، آپ نلتر ویلی سکی ریزورٹ پہنچ جائیں گے۔

نتھیاگلی سکی ریزورٹ

کیا آپ جانتے ہیں کہ نتھیاگلی میں بھی سکی کی سہولت موجود ہے؟ وہ لوگ جو اسلام آباد میں رہتے ہیں اور ویک اینڈ پر نتھیاگلی جاتے ہیں سردیوں میں بھی ایسا ہی کر سکتے ہیں، حالانکہ وہاں برف پوش پہاڑ آپ کے استقبال کے منتظر ہوں گے۔ یہ پاکستان میں ابتدائی افراد کے لیے اسکیئنگ کا بہترین مقام ہے۔ برف سے ڈھکے دیودار کے جنگلات کی خوبصورتی دم توڑ دیتی ہے۔

میرانجانی اور مکش پوری پہاڑوں کے خوبصورت، دلکش نظاروں کے ساتھ 200 میٹر کی ڈھلوان ہے۔ پاکستان میں سب سے زیادہ دیکھی جانے والی سکی سہولیات میں سے ایک، کھلاڑیوں کو اوپر لے جانے کے لیے ایک سکی لفٹ بھی ہے۔ اسلام آباد سے نتھیاگلی کا سفر صرف 2 سے 2.5 گھنٹے ہے۔

تو اسلام آباد والو! آپ کس چیز کا انتظار کر رہے ہیں؟ اپنے سکی بوٹ اور سکی گیئر پیک کریں اور زندگی بھر کے تجربے کے لیے نتھیاگلی کے قدیم سفید ڈھلوان پر جائیں۔ نتھیاگلی میں سکینگ کرنے کا بہترین وقت دسمبر اور جنوری ہے۔

ہوائی اڈے سے فاصلہ

نتھیاگلی سکی ریزورٹ کا سفر کرنے والے ہوائی جہاز کے ذریعے اسلام آباد انٹرنیشنل ایئرپورٹ پہنچ سکتے ہیں۔ وہاں سے جیپ کے ذریعے تقریباً 3 گھنٹے لگیں گے۔ یہ نتھیاگلی سکی ریزورٹ تک پہنچنے کے لیے تقریباً 158 کلومیٹر کا فاصلہ طے کرتا ہے۔

استور ویلی سکی ریزورٹ

گلگت میں ایک اور پوشیدہ جنت، وادی استور نانگا پربت کے سامنے ہے، جو سطح سمندر سے تقریباً 8,126 میٹر بلند ہے۔ رتو ایک چھوٹا گاؤں کا شہر ہے جو استور ضلع میں واقع ہے۔

رتو ایڈونچر کھیلوں کا گھر ہے، اس میں قدرتی اسکیئنگ کی ڈھلوان ہے اور یہ پاکستان میں موسم سرما کے کھیلوں کی تربیت کے لیے مناسب سہولیات بھی فراہم کرتا ہے۔ یہ پاکستان میں ابتدائی افراد کے لیے اسکیئنگ کے بہترین مقامات میں سے ایک ہے۔

ہوائی اڈے سے فاصلہ

استور ویلی سکی ریزورٹ گلگت ایئرپورٹ سے تقریباً 160 کلومیٹر دور ہے۔ جیپ کے ذریعے، آپ کو اپنی منزل تک پہنچنے میں تقریباً چار گھنٹے لگ سکتے ہیں۔

فیئری میڈوز سکی ریزورٹ
نانگا پربت پرفتن فیری میڈوز کا پس منظر ترتیب دیتا ہے، جہاں آپ برف سے ڈھکی ڈھلوانوں سے گزر سکتے ہیں۔ آپ کو فیری میڈوز کا سفر کرنا پڑے گا کیونکہ وہاں کوئی چئیر لفٹیں نہیں ہیں۔ فیری میڈوز میں سکی کرنے کا بہترین وقت وسط دسمبر سے مارچ تک ہے۔ آپ کو یہاں مناسب رہائش نہیں ملے گی اور بہت سے لوگ رات کے قیام کے لیے وہاں جھونپڑیوں پر انحصار کرتے ہیں۔ ان لوگوں کے لئے تجویز کردہ جو ٹریکنگ اور سکینگ دونوں کو پسند کرتے ہیں۔

ہوائی اڈے سے فاصلہ

فیری میڈوز سکی ریزورٹ گلگت ایئرپورٹ سے تقریباً 92 کلومیٹر دور ہے۔ اگر آپ اپنی منزل تک جیپ لے کر جا رہے ہیں، تو آپ 3 گھنٹے کی ڈرائیو پر ہیں۔

شمشال سکی ریزورٹ

وادی ہنزہ کے شمال میں واقع شمشال سکی ریزورٹ پاکستان میں سب سے مشہور سکی ریزورٹس میں سے ایک ہے۔ اگر آپ اسلام آباد سے سفر کر رہے ہیں، تو گاڑی کے ذریعے ہنزہ پہنچنے میں 22 گھنٹے لگیں گے۔

سطح سمندر سے 2,500 میٹر کی بلندی پر خود کو ہم آہنگ کرنے کے لیے آپ کو ہنزہ میں رات گزارنی چاہیے۔ صبح، چار گھنٹے کی ڈرائیو کریں اور آپ وادی شمشال پہنچ جائیں گے، جو سطح سمندر سے تقریباً 3,100 میٹر بلند ہے۔

شمشال سکی ریزورٹ تک پہنچنے کے لیے، آپ کو اپنی منزل تک پہنچنے سے پہلے تقریباً چھ گھنٹے مزید ٹریک کرنے کی ضرورت ہے۔ اپنے محل وقوع کی بدولت یہ پاکستان میں آسانی سے رسائی کے لیے سکی ریزورٹس میں سے ایک نہیں ہے۔ لیکن یہ یقینی طور پر پاکستان کے سب سے مشہور سکی ریزورٹس میں سے ایک ہے۔

آسٹریا کے بین الاقوامی سکیرز نے شمشال سکی ریزورٹ میں سکی ٹریننگ کیمپ بھی لگایا ہے۔ اسکی انسٹرکٹرز اسٹیفن ایگر اور اینڈریاس گمپنبرگر نے 2016 میں 10 روزہ اسکیئنگ ورکشاپ میں شوقیہ اسکائیرز کو موسم سرما کے مقبول کھیل کے لیے مناسب مہارتوں کی تربیت دی۔

ہوائی اڈے سے فاصلہ

گلگت ائیرپورٹ سے شمشال سکی ریزورٹ تک پہنچنے کا فاصلہ تقریباً 207 کلومیٹر ہے۔ اگر آپ جیپ لے رہے ہیں تو یہ تقریباً 6 گھنٹے کی ڈرائیو ہے۔

لہذا، یہ پاکستان میں سردیوں کو گزارنے کے لیے کچھ بہترین جگہوں کا انتخاب تھا۔ اگر آپ اس موسم سرما میں شمالی علاقوں کی سیر کا منصوبہ بنا رہے ہیں، تو یقینی بنائیں کہ آپ پاکستان کے مشہور سکی ریزورٹس کی برف سے ڈھکی ہوئی ڈھلوانوں میں سکیئنگ کے سنسنی کا تجربہ کر رہے ہیں۔

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Back to top button