خواتین

سندھ میں کاروکاری کی گئی عورتوں کا قبرستان

#کاروکاری عورتوں کا قبرستان

سنِدھ کے شہر #ڈہرکی میں ایک قبرستان ‘#کاروکاری عورتوں کا قبرستان کہلاتا ہے۔ وہاں اُن عورتوں کو بغیر غُسل اور کفن کے دفنایا جاتا ہے جو اپنے بھائی، باپ یا شوہر کے ہاتھوں کلہاڑیوں یا کلاشنکوفوں کی خوراک بنتی ہیں۔اور پِھر اُن کو کاری( کالی) قرار دے کر دفنا دیا جاتا ہے۔

غیرت کے نام پر وحشیانہ انداز میں قتل کی گئیں اِن خواتین کی قبروں پر پانی چِھڑکنا، دُعا کرنا اور پُھولوں کی چادر چڑھانے پر غیر اعلانیہ پابندی ہے۔ مقتول خواتین کے کِسی رشتے دار کو اُن کی قبروں پر کُھلے عام جانے کی اِجازت نہیں ہے۔

پُوچھنا یہ تھا کہ کیا کوئی #کالوں کا بھی قبرستان ہے جو جگہ جگہ مُنہ کالا کرتے پھِرتے ہیں اور پھر جرگوں میں بیٹھ کر خواتین کو کاروکاری عورت قرار دیتے ہیں؟ خدا جانے کب تک یہ جنگل کا نہیں بلکہ وحشت اور جہالت کا قانون یہاں چلتا رہے گا؟ہر بار عورت ہی کیوں غیرت کے نام پر قتل ہوتی ہے؟؟؟

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Back to top button