شاہد آفریدی نے بیٹنگ کمپنی کی جانب سے اسپانسر کی گئی جرسی پہننے سے انکار کردیا۔

In وائرل نیوز
March 11, 2023
شاہد آفریدی نے بیٹنگ کمپنی کی جانب سے اسپانسر کی گئی جرسی پہننے سے انکار کردیا۔

شاہد آفریدی نے بیٹنگ کمپنی کی جانب سے اسپانسر کی گئی جرسی پہننے سے انکار کردیا۔

پاکستان کے سابق کپتان شاہد آفریدی نے جوا کھیلنے والی کمپنی کے نشان والی شرٹ پہننے سے انکار کر کے اپنے عقائد کے ساتھ اپنی ثابت قدمی کا مظاہرہ کیا۔ یہ واقعہ اس وقت پیش آیا جب آفریدی کی ایشین لائنز ٹیم کا مقابلہ لیجنڈز کرکٹ لیگ میں گمبھیر کی قیادت والے مہاراجہ سے ہوا۔ آفریدی نے منتظمین کی جانب سے سزا کی دھمکی کے باوجود اپنی قمیض پر نشان چھپا لیا۔

جب گمبھیر ہندوستان کے 12ویں بیٹنگ اوور کے دوران بلے بازی کے لیے تیار تھے، تو انہوں نے عبدالرزاق کی گیند کے خلاف بیٹنگ کرتے ہوئے گیند کو فائن لیگ باؤنڈری کی طرف پھینکنے کی کوشش کی۔ افسوس کی بات ہے کہ گیند ان کے بلے کے کنارے سے ٹکرانے کے بعد ہیلمٹ میں جا لگی۔

اگرچہ گمبھیر شدید زخمی نہیں تھے، آفریدی نے ان کے پاس جا کر پوچھا کہ کیا وہ کھیل جاری رکھنے سے پہلے ٹھیک ہیں۔ ایشیا لائنز نے بھارتی مہاراجہ کو نو رنز کے معمولی فرق سے شکست دی۔ سری لنکن کھلاڑیوں کے ساتھ پاکستان کے چار لیجنڈ کرکٹرز مصباح الحق، شعیب اختر، سہیل تنویر اور عبدالرزاق بھی ایشین لائنز کے رکن تھے۔

مرلی وجے، عرفان پٹھان، رابن اتھپا، ہربھجن سنگھ، اور محمد کیف ہندوستانی ٹیم میں شامل تھے، جس کی کوچنگ گوتم گمبھیر کر رہے تھے۔

/ Published posts: 3237

موجودہ دور میں انگریزی زبان کو بہت پذیرآئی حاصل ہوئی ہے۔ دنیا میں ۹۰ فیصد ویب سائٹس پر انگریزی زبان میں معلومات فراہم کی جاتی ہیں۔ لیکن پاکستان میں ۸۰سے ۹۰ فیصد لوگ ایسے ہیں. جن کو انگریزی زبان نہ تو پڑھنی آتی ہے۔ اور نہ ہی وہ انگریزی زبان کو سمجھ سکتے ہیں۔ لہذا، زیادہ تر صارفین ایسی ویب سائیٹس سے علم حاصل کرنے سے قاصر ہیں۔ اس لیے ہم نے اپنے زائرین کی آسانی کے لیے انگریزی اور اردو دونوں میں مواد شائع کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ جس سے ہمارےپاکستانی لوگ نہ صرف خبریں بآسانی پڑھ سکیں گے۔ بلکہ یہاں پر موجود مختلف کھیلوں اور تفریحوں پر مبنی مواد سے بھی فائدہ اٹھا سکیں گے۔ نیوز فلیکس پر بہترین رائٹرز اپنی سروسز فراہم کرتے ہیں۔ جن کا مقصد اپنے ملک کے نوجوانوں کی صلاحیتوں اور مہارتوں میں اضافہ کرنا ہے۔

Twitter
Facebook
Youtube
Linkedin
Instagram