پاکستان نے فوج کو بدنام کرنے پر سزا مزید سخت کردی

In بریکنگ نیوز
July 27, 2023
پاکستان نے فوج کو بدنام کرنے پر سزا مزید سخت کردی

پاکستان نے فوج کو بدنام کرنے پر سزا مزید سخت کردی

 

 

اسلام آباد – سینیٹ نے جمعرات کو آرمی ایکٹ 1952 میں ترامیم کی منظوری دے دی، نفرت پھیلانے اور پاک فوج کو بدنام کرنے میں ملوث افراد کی سزا میں اضافہ۔

ترمیمی بل وزیر دفاع خواجہ آصف نے پیش کیا تھا اور اسے حریف جماعتوں اور پیپلز پارٹی کے رہنما رضا ربانی کی مخالفت کے درمیان پارلیمنٹ کے ایوان بالا نے منظور کر لیا تھا، جن کا کہنا تھا کہ وہ ایسے کسی قانون کی حمایت نہیں کر سکتے۔

بل میں فوج کو بدنام کرنے میں ملوث افراد کے لیے دو سال تک قید اور جرمانے کی سفارش کی گئی ہے، مزید کہا گیا ہے کہ اس مقصد کے لیے الیکٹرانک چینلز استعمال کرنے والوں پر الیکٹرانک کرائم کے تحت مقدمہ چلایا جائے گا۔

‘اگر کوئی شخص، جو اس ایکٹ کے تحت ہے یا اس کا تابع ہے، کسی سرکاری حیثیت میں حاصل کی گئی کسی بھی معلومات کو ظاہر کرتا ہے یا ظاہر کرنے کا سبب بنتا ہے، جو پاکستان یا افواج پاکستان کی سلامتی اور مفاد کے لیے نقصان دہ ہو یا ہو سکتا ہے، کسی جرم کا مرتکب ہو گا، اور اس ایکٹ کے تحت تشکیل دی گئی عدالت کی طرف سے جرم ثابت ہونے پر، ایک مدت کے لیے سخت قید کی سزا دی جائے گی جو کہ پانچ سال تک ہو سکتی ہے،’ ترمیمی بل پڑھیں

تاہم اس میں کہا گیا ہے کہ آرمی چیف یا کسی مجاز افسر کے نوٹ پر ایسی معلومات افشا کرنے والے شخص کو سزا نہیں دی جائے گی۔

اس میں مزید کہا گیا کہ ‘چیف آف آرمی سٹاف سے پیشگی منظوری لینے کے بعد کیا گیا کوئی بھی انکشاف، یا ان کے ذریعے بااختیار کسی بھی افسر کو، جو کہ مقررہ طریقے سے ہے، غیر مجاز انکشاف نہیں سمجھا جائے گا۔’

یہ اس ایکٹ کے تابع افراد کو ان کی ریٹائرمنٹ، رہائی، استعفیٰ، ڈسچارج، برطرفی یا ملازمت سے برطرفی کی تاریخ سے دو سال کے لیے سیاسی سرگرمیوں میں حصہ لینے سے بھی روکنا چاہتا ہے، جبکہ وہ لوگ جو ‘ملازمت، حمایت یافتہ، ٹاسک یا دوسری صورت میں منسلک ہیں۔ جیو نیوز نے رپورٹ کیا کہ ایکٹ کے تحت ‘حساس’ ڈیوٹی پر ان کے عہدے چھوڑنے کے بعد پانچ سال تک سیاسی سرگرمیوں سے روک دیا جائے گا۔

‘جو کوئی بھی اس ایکٹ کے تحت تشکیل دی گئی عدالت کی طرف سے سزا سنائے جانے پر [ان شرائط] کی خلاف ورزی کرتا ہے، اسے ایک مدت کے لیے سخت قید کی سزا دی جائے، جو کہ دو سال تک بڑھ سکتی ہے،’ بل پڑھا گیا۔

اس میں مزید کہا گیا ہے کہ فوج کو بدنام کرنے میں ملوث افراد کے خلاف کارروائی کی جائے گی اور انہیں الیکٹرانک کرائمز ایکٹ 2016 (ایکٹ ایکس ایل آف 2016) یا متعلقہ الیکٹرانک، ڈیجیٹل اور سوشل میڈیا قوانین کے تحت سزا دی جائے گی۔

‘کوئی اہلکار جو اس ایکٹ کا جان بوجھ کر تضحیک کرتا ہے، اسکینڈلائز کرتا ہے، نفرت پھیلاتا ہے یا دوسری صورت میں پاکستان کی مسلح افواج یا اس کے کسی حصے کو دوسروں کے اندازے کے مطابق کم کرنے کی کوشش کرتا ہے، اس ایکٹ کے تحت تشکیل دی گئی عدالت کی طرف سے سزا سنائے جانے پر مقررہ طریقے سے، قید کی سزا دی جائے جو دو سال تک بڑھ سکتی ہے یا جرمانہ یا دونوں،’ اس نے مزید کہا۔

/ Published posts: 3237

موجودہ دور میں انگریزی زبان کو بہت پذیرآئی حاصل ہوئی ہے۔ دنیا میں ۹۰ فیصد ویب سائٹس پر انگریزی زبان میں معلومات فراہم کی جاتی ہیں۔ لیکن پاکستان میں ۸۰سے ۹۰ فیصد لوگ ایسے ہیں. جن کو انگریزی زبان نہ تو پڑھنی آتی ہے۔ اور نہ ہی وہ انگریزی زبان کو سمجھ سکتے ہیں۔ لہذا، زیادہ تر صارفین ایسی ویب سائیٹس سے علم حاصل کرنے سے قاصر ہیں۔ اس لیے ہم نے اپنے زائرین کی آسانی کے لیے انگریزی اور اردو دونوں میں مواد شائع کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ جس سے ہمارےپاکستانی لوگ نہ صرف خبریں بآسانی پڑھ سکیں گے۔ بلکہ یہاں پر موجود مختلف کھیلوں اور تفریحوں پر مبنی مواد سے بھی فائدہ اٹھا سکیں گے۔ نیوز فلیکس پر بہترین رائٹرز اپنی سروسز فراہم کرتے ہیں۔ جن کا مقصد اپنے ملک کے نوجوانوں کی صلاحیتوں اور مہارتوں میں اضافہ کرنا ہے۔

Twitter
Facebook
Youtube
Linkedin
Instagram