TOURISM

مانسہرہ میں واقع، ایک خوبصورت آنسو جھیل

کوہ ہمالیہ کے دامن میں واقع وادی منور میں ایک جھیل واقع ہے۔ جس کی ساخت بالکل آنسو کے قطرے جیسی ہے۔ اور یہی وجہ ہے کہ اس جھیل کا نام آنسو جھیل ہے۔ آنسو جھیل صوبہ خیبر پختونخوا کے ضلع مانسہرہ میں واقع ہے۔ اس جھیل کی سطح سمندر سے اونچائی تقریبا 4250 میٹر یعنی 13940 فٹ ہے۔ اس جھیل کا شمار پاکستان کی خوبصورت ترین جھیلوں میں ہوتا ہے۔ 1993 سے قبل اس جھیل کے بارے میں کسی کو بھی خبر نہیں تھی۔ اس جھیل کو پہلی بار 1993 میں پاک فضائیہ کے پائلٹ نے دریافت کیا تھا۔ آنسو جھیل کے قریب رکنے کا کوئی مناسب انتظام نہیں ہے۔ کچھ شوقین افراد اس جیل کے نزدیک کیمپ لگا لیتے ہیں۔ مگر یہ خطرناک ہے۔ اور مقامی لوگ بھی اس کام سے منع کرتے ہیں۔ آنسو جھیل تک رسائی حاصل کرنے کے لئے دو راستے اختیار کیے جا سکتے ہیں۔

آنسو جھیل تک پہنچنے کا پہلا راستہ

ایک راستہ مختصر مگر ڈھلوانی ہے۔ جو کہ جھیل سیف الملوک سے شروع ہوتا ہے۔ اس راستے کی مسافت تقریبا سات گھنٹے ہے۔ جس میں آنا اور جانا دونوں شامل ہے۔ سال کے بیشتر حصے میں یہ راستہ برف سے ڈھکا رہتا ہے۔ جولائی، اگست کے مہینے میں اس راستے پر سفر کرنا قدرے آسان ہے۔ اس راستے کے ذریعے آنسو جھیل تک پہنچنے کے لیے صبح سویرے روانہ ہونا عقلمندی ہے۔ تاکہ واپسی سورج غروب ہونے سے پہلے ہو سکے۔

آنسو جھیل تک پہنچنے کا دوسرا راستہ

جبکہ دوسرا راستہ ایک مقامی گاؤں مہانڈری سے شروع ہوتا ہے۔ جو ناران کے شمال میں 40 کلومیٹر کے فاصلے پر واقع ہے۔ اس کے بعد تقریبا چھ سے سات گھنٹے سفر کے بعد ایک سرسبز میدان آتا ہے۔ یہاں سے راستہ مزید ڈھلوانی ہو جاتا ہے۔ اور مزید 3 سے 4 گھنٹوں کی مسافت طے کرنے کے بعد آنسو جھیل تک رسائی ممکن ہے۔ جھیل سیف الملوک کو دیکھنے والے سیاح اس جھیل کا سفر ضرور کرتے ہیں۔ آنسو جھیل کے سفر میں خوبصورتی اور خطرہ ساتھ ساتھ رہتے ہیں۔ مگر جن کو دیکھنے کا شوق ہوتا ہے۔ وہ اپنے شوق کو پورا کرنے کے لئے اس جیل کو دیکھنے ضرور آتے ہیں۔

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Check Also
Close
Back to top button
error: Content is protected !!