ادب

  • ویڈیو گیمز کے اثرات

    آپ نے وہ مشہور کہاوت تو سنی ھو گی کہ”دیواروں کے بھی کان ہوتے ہیں”لیکن اس میں لوگ ایک اہم چیز بھول جاتے ہیں کہ دیواروں کے صرف کان ہی نہیں ہوتے بلکہ ان کی تو آنکھیں بھی ہوتی ہیں۔۔۔ بالکل درست ہے یہ بات کیونکہ میں بھی اسی دیوار میں لگی اینٹ ھوں۔۔۔ جو ایک بہت ہی خوبصورت بنگلہ کی اسٹڈی روم کی ھے ویسے تو اس دیوار کو مالکوں نے اپنے بچے کی پسندیدہ کارٹون پینٹنگ سے بہر دیا ہے لیکن شکر کہ میں معصوم خالی ہی رہی پر افسوس کہ میں نے وہ سب دیکھا اور سنا جو اب میں آپ لوگوں کو بتانے والی ہوں۔۔۔۔۔ دراصل یہ اسٹڈی روم اس بچے کا ہے جس سے مجھے…

    Read More
  • ایک آدمی جو دنیا میں جنّت کی سیر کرتاہے

    جان گناہوں کی دنیا کا ایک مشہور باسی ہے۔ عیاش اور بے فکر نوجوان! دن رات مستی میں گم ،خوبصورت حسیناوں کے ساتھ مشغول ،آرام پسند اور تن پروری اس کا پسندیدہ مشغلہ ۔ صورت میں بھی کمال لاکھوں روپے آمدن مگر ساری رقم عیاشی میں خرچ کرتا ہے بادشاہوں جیسی زندگی گزارنے والا یہ نوجوان اندرونی بے چین ،اتنی ساری کمال اور لاجواب عیاش پسند زندگی کےبا وجود اسے کوئی چیز بے چین رکھتی ، وہ اس بے چینی کو ختم کرنے کی کوشش کرتا ہے۔وہ ایسی زندگی کی تلاش میں ہے جہاں اسے دائمی سکون ہو، وہ دائمی سکون کی تلاش میں اپنی عیاش زندگی کو چھوڑ کر ایک نئے جہاں کا باسی بننا چاہتا ہے۔ جہاں اسے…

    Read More
  • الفاظ کا جادو

    الفاظ کا جادو

    الفاظ کا جادو یہ سن ٢٠٠٩کی بات ہے آخری بار دوران پریگنینسی کچھ کمپلیکیشنز کی وجہ سے ضیالدین ہاسپٹل میں میری ڈاکثر نے مجھے ایڈمٹ ہونے کے لیے کہا میرے شوہر چاہتے تھے کہ میں پرائیویٹ روم میں رہوں پر اس میں خرچہ اچھا خاصہ تھا اور پھر کسی کو ساتھ رکنا بھی پڑتا میں کسی کو مشکل میں نہیں ڈالنا چاہتی تھی کیونکے سسرال والے پہلے ہی میرے تین بچوں کو سنبھال رہے تھےموسم اچھا تھا اس لیے میں نے انہیں منع کردیا اور جنرل وارڈ میں داخل ہو گئی. وارڈ میں زیادہ رش نہیں تھا مجھ سے پہلے چار خواتین وہاں ایڈمٹ تھیں دو زچگی کی وجہ سے اور دو میری ہی طرح کسی کمپلیکیشن کی وجہ سے…

    Read More
  • وار

    وار

    وار پو پھٹنے کے بعد کی تازگی بھی کمال ہوتی ہے ۔چاہے گرمیوں کی ہو یا سخت جاڑےکی ۔ رفیعہ حسب معمول فجر کے بعد مخصوص وظائف کا ورد کرتی ہوئی وسیع لان میں نکل آئی تھیں ۔ آج کی صبح ان کے لیے کچھ معمول سےہٹ کر تھی ۔سید وصی شاہ ان کا بیٹا سخت ایکسرسائزمیں مصروف تھا ۔اس کی ہر ہر حرکت سے واضح تھا کہ وہ شدید غصے میں ہے ۔ ماں کو دیکھ کر وہ ان کے قریب چلا آیا ۔سخت سردی میں بھی اس کا سارا بدن بھیگا ہوا تھا۔ ” وہ صحیح نہیں کر رہے ، آپ کو انھیں روکنا ہو گا “. یہ کہہ کر وہ چھوٹے سے تولیے سے اپنا چہرہ اور…

    Read More
  • سنبھالا گیا

    سنبھالا گیا

    گیا جہان سے ادنا یا کوئی اعلا گیا کسی کا غم بھی کہاں دیر تک سنبھالا گیا سلیقہ اس میں مجھے اک ذرا دِکھے تو سہی کہا جو کام ہمیشہ وہ کل پہ ٹالا گیا قُصور ہو گا تُمہارا بھی کچھ نہ کچھ گُڑیا سبب تو ہے جو تمہیں گھر سے یوں نکالا گیا پجاری مال کے ایسے کہ جیسے مالا ہو جہاں بھی چاند گیا ساتھ اُس کا ہالہ گیا کہا تھا میں نے کہ گھر سے اتار لو جالا مکاں میں اب ہے اندھیرا وہ سب اجالا گیا تڑپ، جدائی، محبت، جمال، زیبائی نجانے کون سے سانچوں میں دل کو ڈھالا گیا رشیدؔ کاہے کی یہ پنجہ آزمائی ہے؟ کبھی سنگھار سے دیکھا کہ رنگ کالا گیا؟ رشید…

    Read More
  • احساس محبت

    احساس محبت

    احساس محبت تمام گھر کی فضاء خاموش اور پرسکون تھی. نہایت تندہی کے ساتھ وہ سل پرشامی کبابوں کا مصالحہ پیس رہی تھی رات خاصی بیت چکی تھی پر اس نے جانتے بوجھتے یہ کام سب سے آخر میں رکھا تھا کیونکہ سل پر پیسنے کی مشقت کے بعد کسی اور کام کی ہمت نہیں رہتی تھی اور دن میں تو اس کے کام کبھی ختم ہی نہ ہوئے تھےاسی لیے اسنے سوچا تھا مصالحہ پیستے ہی سونے کے لیے چلی جائے گی پر اب وہ کچھ دیر سے الجھن میں مبتلا تھی اسے اپنی کمر پر کسی کی نگاہوں کا ارتکاز مسلسل محسوس ہورہا تھا اور یقینا وہ نگاہیں ارتضی احمد کی ہی تھیں کئی دنوں سے وہ ارتضی…

    Read More
  • ایماندار قوم

    ایماندار قوم

    گزشتہ سات دہائیوں سے ہماری قوم آزاد ھونے کا دعوی کر رہی ھےاور اسلام کے نام پر آزادی لینے کی دعوے دار بھی ھے تو کیا آج کے دور میں ایک خطہ ارض حاصل کر لینا ہی آزادی ھے؟ اور کیا اسلام کے نام پر آزادی حاصل کی ھے یا اسلام کا نام استعمال کیا گیا ھے آزادی حاصل کرنے کیلئے یقیناً ھمارا طرزعمل ہی اس کی وضاحت کر سکتا ھےاس کیلئے اپنے گریبان میں جھانکناھو گا کہ آخر ھم اسلام کسے سمجھتے ہیں اور اسلام کی اصل کیا ھے اور ھم اس پر کس حد تک عمل کرتےہیں کیا صرف عبادات ہی اسلام ہیں یا پھر حقوق العباد اور اخلاقیات بھی اسلام کا طرہ امتیاز ہیں ؟آزاد ہونے کے…

    Read More
  • اڑتی چڑیا

    اڑتی چڑیا

    اڑتی چڑیا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ صبح سویرے والی سورج کی نرم گرم کرنوں نے میری پلکوں پر دستک دے کر مجھے جگایا تھا ۔سخت جاڑے کے دن تھے۔ شاید رات اماں کھڑکی کی کنڈی چڑھا نا بھول گئی تھی تبھی تو کھڑکی میں پیدا ہونے والی جھری سے وہ کرنیں میرے تکیے تک آ پہنچیں تھیں ورنہ تو میں دن چڑھے تک سونے کا عادی تھا۔کرنوں کے ساتھ آنے والی ٹھنڈک بھی مجھے کبپکپا رہی تھی۔ایسے میں مجھے اماں کے ساتھ کی ضرورت تھی۔ “ام۔۔ام مماں ” ۔ منہ کھولتے ہی مجھے اپنے دائیں گال پر گیلا پن محسوس ہوا تھا۔میں نے بمشکل بھاری رضائی سے کھینچ کر اپنا ہاتھ باہر نکالا پر گال پر بہنے والی رال میں نے ہتھیلی سے…

    Read More
  • راکاپوشی

    راکاپوشی

    کرن نعمان راکا پوشی دف اور بانسری کے سنگم سے بنی ایک دل آویز دھن اسے خوابوں کی دنیا سے کھینچ کر سنگلاخ برفیلے پہاڑوں کی دنیا میں واپس لے آئی تھی۔گو کہ ابھی رات کچھ زیادہ نہیں ہوئی تھی لیکن گلگت سے وادی نگر کے اس چھوٹے سے گاوں مینا پن تک کا سفر جوزفین کے لیے خاصہ تھکا دینے والا تھا۔اوشو تھانگ (شاہی مہمان خانہ) ہوٹل میں ان کے کمرے پہلے سے ہی بک کرواۓ جاچکے تھے۔اگلا ایک ہفتہ اسکے لیے شدید جسمانی مشقت کا تھا جس کے لیے وہ اپنے جسم اور ذہن کو مکمل تیار رکھنا چاہتی تھی اسی لیے بلا تردد اپنے کمرے میں آتے ہی سو گئی تھی۔دیگر معاملات اسکے گروپ لیڈر جیمز نے…

    Read More
  • کوشش کا دیپ

    کوشش کا دیپ

    کوشش کا دیپ یوں تو عموما میرے صبح کے معمولات ایک جیسے ہوتے ہیں.نماز تلاوت،پھر بچوں کو جگاکران کا ناشتہ اور لنچ بنانا اور چھوٹی بیٹی کی چوٹی تو لازمی بنانا ہی ہوتی ہے پر مہینے کا ایک یا دو دن ایسے ضرور ہوتے ہیں جب معمول سے ہٹ کر ذرہ افراتفری مچ جاتی ہے ۔ میری بڑی بیٹی ماہین عموما اپنی دوستوں کے ساتھ مل کر یونیورسٹی چلی جاتی ہے پر جب ساتھ جانے والا کوئی نہ ہو تو مجھے یا اسکے پاپا کو چھوڑ کر آنا پڑتا ہے. آج بھی کچھ ایسا ہی ہوا آخر وقت پر ساتھ جانے والی لڑکی نے کسی مجبوری کے تحت ساتھ جانے سے معذرت کرلی۔ ماہین کی آج ایک ہی کلاس تھی…

    Read More
Back to top button
error: Content is protected !!