کشمیر

  • یوم یکجہتی کشمیرپاکستان میں ہر سال 5 فروری کو عام تعطیل ہوتی ہے۔ اس میں ہندوستان کی مقبوضہ کشمیر کے عوام کے ساتھ پاکستان کی حمایت اور یکجہتی ، ان کی جاری جدوجہد آزادی ، اور کشمیری شہدا کو خراج عقیدت پیش کرنے پر توجہ دی جارہی ہے جنہوں نے کشمیر کی آزادی کے لئے لڑتے ہوئے اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے۔ کیا یوم کشمیر عام تعطیل ہے؟ یوم یکجہتی عام تعطیل ہے۔ عام آبادی کے لیے یہ ایک دن کی چھٹی ہے ، اور اسکول اور زیادہ تر کاروبار بند ہیں۔ یوم یکجہتی کشمیر کشمیر کے عوام کی حمایت کرنے اور خطے کے ایک حصے میں آزادی جدوجہد کو تسلیم کرنے کے لئے وقف ہے۔ لوگ کیا کرتے…

    Read More
  • آزاد کشمیر:یونیورسٹی آف کوٹلی سے اہم خبر اس وقت جب پاکستان کی تمام یونیورسٹیاں پڑہائی کیلیے کھل رھیں ہیں وھیں پر یونیورسٹی آف کوٹلی نے یونیورسٹی بند رکھنے کا اعلان کر دیا ہے،جس پر طالبعلم نہایت نا خوش ہیں ۔یاد رہے کہ یہ یونیورسٹی ایچ ای سی سے تصدیق شدہ ہے۔اور وزیر تعلیم شفقت محمود نے بزات خود پاکستان کی سب یونیورٹیوں کا یکم فروری کو کھولنے کا اعلان کیا تھا۔اس کے با وجود یونیورسٹی کو بند رکھنا طلبا کے ساتھ زیادتی ہے۔ بے شک کرونا ایک خطرناک وبا ہے ،مگر اس وقت پاکستان میں اور خاص کر کے آزاد کشمیر میں کیسز کی تعداد پہلے کی نسبت کم ہے۔اور چین کی جانب سے پاکستان کو پانچ لاکھ ویکسین دینے…

    Read More
  • کشمیر کا مستقبل۔۔۔۔ اسلام و علیکم ۔۔۔ جنوری کا اختتام ہو رہا ہے اور فروری کا عروج قریب آرہا ہے۔ فروری سنتے ہی ہمیں کشمیرکا نام یادآتا ہےذہنوں میں کشمیری بھائی بہنوں کا عکس سا بن جاتا ہے۔ خون جوش مارنے لگتا ہےمسلمان بھائی بہنوں کے لیے۔آئیے کچھ تاریخ پہ نظر ڈال لیتے ہیں۔ دو اہم ممالک پاکستان اور بھارت کے درمیان ایک اہم ترین مسئلہ ہے۔ قیام پاکستان کے بعد 1948میں بھارت نے اپنی فوج کشمیر میں اُتار دیں اور اس پر زبردستی قبضہ کر لیا۔ یہ قبضہ ایک طویل عرصہ گزر جانے کے باوجود آج بھی قائم ہے حالانکہ قانون آزادی ہند کے تحت یہ طے پایا تھا کہ جن علاقوں میں مسلمانوں کی اکثریت ہے وہ پاکستان…

    Read More
  • اسلام آباد: وفاقی حکومت نے اعلان کیا ہے کہ پاکستان 5 فروری یوم یکجہتی دن کو تعطیل کے طور پر غور کرے گا۔ وزارت داخلہ کی جانب سے 14 جنوری 2021 کو جاری کردہ نوٹس کے مطابق یوم یکجہتی کشمیر منانے کی تعطیل ہوگی۔ حکومت نے کہا کہ یوم کشمیر منایا جارہا ہے “کشمیریوں کی شہادت اور ان کی سیاسی اور اخلاقی حمایت کو حق خودارادیت کی جدوجہد میں۔” کیسیمیرس سے اظہار یکجہتی کے لئے 5 فروری کو ایک منٹ کی خاموشی منائی جائے گی۔ مسئلہ کشمیر پاکستان اور بھارت کے مابین ایک فلیش پوائنٹ ہے اور اسلام آباد پوری دنیا سے مسئلہ کشمیر کو ووٹ دینے کی تاکید کررہا ہے۔ ہندوستانی وزیر اعظم نریندر مودی کے ہندوستانی آئین کے…

    Read More
  • از قلم :کاشر یوں تو سیاست سنت ہے لیکن آج کے دور میں سیاست کسی اور ہی چیز کا نام ہے ۔ایشیا میں اس کی تعریف بدل جاتی ہے اور پاکستان کا بارڈر کراس کرتے ہی سیاست کا معنی و مفہوم بدل جاتا ہے ۔یہاں بے بے دردی ،بے غیرتی اور بے شرمی کا نام سیاست ہے۔ جوں ہی پاکستان سے دریائےِکشن گنگا (دریائے جہلم) کراس کر کے کشمیر کی حدود میں داخل ہوں گے تو سیاست کے معنی و مفعوم اور بھی بدل جائیں گے۔ ہر دکان پہ آپ کو قائدِ کشمیر ، فخرِ کشمیر،مجائدِاول، غازیِ ملت و دیگر کئی قسم کے برینڈ ملیں گئے۔ ان برینڈز کے بارے میں آپ کو مختلف قسم کے خیالات والے لوگوں سے…

    Read More
  • ہمیں لاشیں واپس کرو ورنہ ہم خود کشی کرینگے۔ یہ الفاظ بلوچستان کے ہزارہ برادری کے لواحقین کے نہیں کیونکہ ان کو لاشیں تو ملیں لیکن گردنیں کٹی ہوئیں۔ یہ داستاں اتھر وانی کے ہیں جسے وادی سرنگر میں بے دردی سے شہید کیا گیا۔ یہ مظالم دنیا بھر کے انسانی حقوق کے عالم بردار دیکھ رہے ہیں لیکن خاموش ہیں۔ جنوری کے 5 تاریخ کو دنیا بھر میں کشمیر کی خود ارادیت اور کشمیریوں سے ہمدردی اور یک جہتی کے طور پر منایا جاتا ہے۔ایک طرف ہندوستانی مسلح افواج جو سال بھر معصوم کشمیریوں کے خون سے ہولی کھیلتی ہیں دوسری جانب ہمارے سیاستدان ہیں جن کو یوم کشمیر کے دن ہی کشمیریوں کا خیال آتا ہے۔ ویسے تو…

    Read More
  • کشمیر جنت نظیر میں سردیوں کے موسم کا آغاز دسمبر میں ھو جاتا ھے ،جیسے ہی جاڑے ک موسم شروع ھو تا ھے جموں کشمیر میں درجہ حرارت میں اضافہ ہو جاتا ھے _اس مرتبہ کشمیر میں سردی کے کئ دہائیوں کے ریکارڈ ٹوٹ گے ھیں_ جاڑے کا موسم کشمیر میں تین ادوار میں ھوتا ھے_جو کہ 40 روز پر مشتمل ھوتا ھے_شدید سردی میں لوگ گھروں میں قید ھو کر رہے جاتے ھیں_ پہلے 20 دن گزرنے کے بعد اگلے 20 دنوں میں برف پگھلنے لگتی ھے اخری دس دنوں میں مسم بہار کی آمد شروع ھو جا تی ہے _شمسی تاریخ کے حساب سے 21 دسمبر سے پوہ شروع ھو جاتا ھے _ان دنوں میں خون کو جما…

    Read More
  • میں کشمیر ہوں اور ہاں مجھے بھی جینے کا حق ہے۔ اور یہ حق مجھ سے کوئی نہیں چھین سکتا۔ خواہ وہ دنیا کی نامنہاد کو(سو کالڈ ڈیموکریسیز) ہوں یااپنے آپ کو سپر پاور کنہے والی طاقتیں۔ مگر پچھلے 70 سالوں سے میں جل رہا ہوں۔اوربھڑکتی آگ کے شعلوں نے نہ جانے کتنے ہی معصوم پھولوں کو اُوجاڑا اور کتنی ہی قربانیاں اور مجھے دینا ہونگی۔ کہا جاتا ہے کہ “کشمیر جل رہا ہے” ، “کشمیریوں پر ظلم ہورہا ہے” مگر یہ سب منہ کی باتیں ہیں ۔ کسی کو کوئ پروا نہیں ہےاور کوئی میرے درد کو محسوس نہیں کر سکتا۔ کیوں کہ کہیں ان پرہونےوالی ڈالرز کی برسات بند نہ ہو جائے ۔تاہم دکھ اس بات کا نہیں…

    Read More
  • بسم اللہ الرحمن الرحیم السلام علیکم تمام دیکھنے والوں اور پڑھنے والوں کو امید کرتا ہوں تمام لوگ ٹھیک ٹھاک ہوں گے آج میں جس ٹوپک پر بات کرنا چاہتا ہوں وہ کشمیر کا ٹوپیک ہے تقریبا پوری دنیا اس بات سے واقف ہے کہ کشمیر نے کتنی قربانیاں دیں اپنی آزادی اور اپنے کلمہ شریف کے لیے کشمیر نے اپنے مذہب کے لئے بہت ہی زیادہ قربانیاں دی ہے شاید نہ جانے کوئی آدمی ایسا ہو دنیا میں جو اس بات سے ناواقف ہوں کیوں کہ جتنی قربانی کشمیر نے دی ہے ایسے لگتا ہے کہ جیسے زمین پر پانی نہیں خون بیہ راہا ہے میری دعا ہے کہ اللہ تعالی جلد از جلد کشمیر کو آزادی عطا کرے…

    Read More
  • 1۔ بھمبر سماہنی آزاد کشمیر شاہراہ جموں پر سیری ہل چوک پر ہونے والے موٹر سائیکل حادثہ میں زخمی ہونے والے راجہ طفیل ولد حاکم خان ساکن پنڈ جٹاں جانبحق ہو گئے موٹر سائیکل سوار منیب ولد محمد شفیق ساکن ہل سمرالہ ڈسٹرکٹ ہسپتال میرپور میں تشویشناک حالت میں زیر علاج ہیں شاہراہ جموں سے ہل سمرالہ لنک کے چوک پر موٹر سائیکل کی ٹکر لگنے سے بزرگ شہری راجہ طفیل شدید زخمی ہوئے جنہیں بھمبر ریفر کیا گیا گجرات جاتے ہوئے شدید زخمی جان کی بازی ہار گئے واقعہ کی اطلاع موصول ہونے پر پولیس نفری جائے وقوعہ پر پہنچی اور ابتدائی رپورٹ کا اندارج کیا گیا حادثہ کی وجہ بننے والے موٹر سائیکل کو تحویل میں لے لیا…

    Read More
Back to top button
error: Content is protected !!