اسلامک

ایک خواب

ایک آدمی نے ایک رات خواب کو دیکھا کہ گویا میں بڑے وسیع میدان میں ہوں اچانک ایک خطرناک ببر شیر اس کےپیچھے دوڑ رہا ہے بھاگتے بھاگتے کوئی پناہ نہ مل رہی تھی دیکھا کہ ایک بہت بڑا کنواں ہے اور اس پر ایک درخت ہیں جس کی شاخیں کنویں میں لٹک رہی ہیں یہ شاخوں کو پکڑ کر کنویں میں لٹک گیا یہ شیر بھی کنویں کے اوپر آکر کھڑا ہو گیا تو پھر اس آدمی نے کنویں میں دیکھا تو ایک بہت بڑا اژدھا منہ کھولے ہوئے ہے تو یہ اور بھی گھبرا گیا کہ اوپر شیر ہے اور نیچے اژدھا ہے پھر جب اس نے شاخوں کی طرف دیکھا کہ وہ شاخیں کہ جن کو وہ پکڑ کر یہ لٹکا ہوا تھا اس کو بھی دو موٹے موٹے چوہے کاٹ رہے ہیں جن کی رنگ سیاہ و سفید تھے اب تو سوائے ہلاکت کے کچھ بھی نہ تھا موت سامنے ہے نہ جائے رفتن نہ پائے ماندن۔۔۔
یہ خوفناک خواب صبح اخک بزرگ کو سنایا بزرگ خواب کی تعبیر کچھ یہ بتائی کہ وہ شیر موت کا فرشتہ ہیں جو ہر وقت ہم پر مسلط ہے یعنی اس سے مضر نہیں ہے اور کنواں قبر ہے ہر انسان اس میں جا ئے گا اور وہ سیاہ اور سفید جانور جو درخت کو کاٹ رہے ہیں وہ زندگی کے دن و رات ہے جو انسان کی زندگی کو ختم کر رہے ہیں پھر بزرگ نے فرمایا کہ یہ خواب ایک حقیقت ہے جس سے ہر انسان کا سابقہ پڑے گا۔۔۔
ہر حال میں رہا جو ترا آسرا مجھے
مایوس کر سکا نہ ہجوم بلا مجھے
اله العالمین ہمارے دلوں میں دنیا سے نفرت اور آخرت کی محبت نصیب فرما۔۔۔آمین۔۔۔

Irfan ullah

میرا نام عرفان اللہ ہے میں ایک طالب علم ہوں۔

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Back to top button