حریم شاہ نے پی پی پی کے وزیر کی سرکاری رہائش گاہ پر لائیو مجرے کی ویڈیو ٹویٹ کی

حریم شاہ نے پی پی پی کے وزیر کی سرکاری رہائش گاہ پر لائیو مجرے کی ویڈیو ٹویٹ کی

حریم شاہ نے پی پی پی کے وزیر کی سرکاری رہائش گاہ پر لائیو مجرے کی ویڈیو ٹویٹ کی

 

 

ایک حالیہ انکشاف میں، متنازع ٹک ٹوکر حریم شاہ نے پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) سے تعلق رکھنے والے ایک وفاقی وزیر کے ملوث ہونے کے ممکنہ طور پر قابل مذمت واقعہ کو منظر عام پر لایا ہے۔ یہ الزام ہے کہ اس وزیر نے اسلام آباد میں اپنی سرکاری رہائش گاہ پر ایک لائیو مجرا، جو کہ ایک روایتی رقص کی شکل ہے، کی میزبانی کی۔

شاہ، جنہوں نے پہلے پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان کی گرفتاری کے بعد سوشل میڈیا پر توہین آمیز مواد کو منظر عام پر لانے کی دھمکی دی تھی، لگتا ہے کہ وہ اپنے وعدے پر عمل پیرا ہیں۔ اس نے ٹویٹر پر ایک ویڈیو شیئر کی، جس میں پی پی پی کے میٹنگ روم میں نظر آنے والی ایک چھوٹی سی عورت کو ایک موہک رقص کرتے ہوئے دکھایا گیا ہے۔ خاص طور پر، پیپلز پارٹی کی ممتاز شخصیات، جیسے مرحوم ذوالفقار بھٹو، بے نظیر بھٹو، اور بلاول بھٹو زرداری کے فریم شدہ پورٹریٹ پس منظر میں دیکھے جا سکتے ہیں۔

ویڈیو میں ایک گھمبیر تفصیل بھی پیش کی گئی ہے—ایک شراب کی بوتل جو میز پر نظر آتی ہے—ایک ایسا عنصر جو سرکاری حکومت کی ترتیب کے متوقع انداز سے سختی سے متصادم ہے۔

حریم شاہ نے اپنے ساتھ والی ٹوئٹ میں صورتحال کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا:

‘پیپلز پارٹی کے وفاقی وزیر اسلام آباد میں اپنی سرکاری رہائش گاہ میں مجرے کی محفل منعقد کر رہے ہیں ؟؟؟؟؟؟؟؟؟’

اگرچہ حریم شاہ نے اس میں ملوث وزیر کی مخصوص شناخت کو واضح طور پر ظاہر نہیں کیا ہے، تاہم ویڈیو کے مضمرات نے خاصی توجہ حاصل کی ہے، خاص طور پر موجودہ سیاسی طور پر چارج شدہ ماحول میں۔

چونکہ یہ ویڈیو سوشل میڈیا کے مختلف پلیٹ فارمز پر تیزی سے پھیل رہی ہے، عوامی ردعمل حیران کن، تنقید اور غصے کا مرکب ہے۔ جب کہ کچھ مبصرین اس واقعے کو سنجیدگی کی خلاف ورزی اور عوامی عہدہ رکھنے سے منسلک اخلاقی ذمہ داریوں کو سمجھتے ہیں، دوسروں نے ویڈیو میں دکھائے جانے والے ظاہری طرز عمل کے حوالے سے اپنی مایوسی اور مایوسی کا اظہار کیا ہے۔

/ Published posts: 3237

موجودہ دور میں انگریزی زبان کو بہت پذیرآئی حاصل ہوئی ہے۔ دنیا میں ۹۰ فیصد ویب سائٹس پر انگریزی زبان میں معلومات فراہم کی جاتی ہیں۔ لیکن پاکستان میں ۸۰سے ۹۰ فیصد لوگ ایسے ہیں. جن کو انگریزی زبان نہ تو پڑھنی آتی ہے۔ اور نہ ہی وہ انگریزی زبان کو سمجھ سکتے ہیں۔ لہذا، زیادہ تر صارفین ایسی ویب سائیٹس سے علم حاصل کرنے سے قاصر ہیں۔ اس لیے ہم نے اپنے زائرین کی آسانی کے لیے انگریزی اور اردو دونوں میں مواد شائع کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ جس سے ہمارےپاکستانی لوگ نہ صرف خبریں بآسانی پڑھ سکیں گے۔ بلکہ یہاں پر موجود مختلف کھیلوں اور تفریحوں پر مبنی مواد سے بھی فائدہ اٹھا سکیں گے۔ نیوز فلیکس پر بہترین رائٹرز اپنی سروسز فراہم کرتے ہیں۔ جن کا مقصد اپنے ملک کے نوجوانوں کی صلاحیتوں اور مہارتوں میں اضافہ کرنا ہے۔

Twitter
Facebook
Youtube
Linkedin
Instagram